محمدشہاب الدین کی عرضی پربہارسرکارکوسپریم کورٹ کانوٹس

shahabuddin
بہوبلی لیڈرمحمدشہاب الدین کی جانب سے دائرعرضی پرسپریم کورٹ نے بہارسرکار کونوٹس جاری کیاہے۔ دراصل،محمدشہاب الدین نے آرمس ایکٹ میں سزاکے فیصلے کوسپریم کورٹ میں چیلنج کیاہے۔شہاب الدین نے سپریم کورٹ میں پٹنہ ہائی کورٹ کے فیصلے کوچیلنج کیاہے۔کورٹ نے شہاب الدین کی عرضی پربہارسرکارکونوٹس جاری کرکے جواب طلب کیاہے۔یادرہے کہ شہاب الدین کوپٹنہ ہائی کورٹ نے آرمس ایکٹ کے تحت قصوروارٹھہرایاتھا، جسے شہاب الدین نے سپریم کورٹ میں چیلنج کیاہے۔واضح ہوکہ یہ معاملہ شہاب الدین کے ذریعہ کے سیوان کے سابق ایس پی سنگھل پرہوئے حملے سے جڑاہواہے۔
محمدشہاب الدین کواس معاملے میں نچلی عدالت سے ملی 10سال کی سزاکوہائی کورٹ نے رد کردیاتھا۔شہاب الدین پرسیوان کے سابق ایس پی سنگھل پرجان لیواحملہ کرنے کا الزام لگاتھا۔الزام لگنے کے بعد کورٹ نے شہاب الدین کے دونوں باڈی گارڈ کوبھی 10سال کی سزاسنائی تھی، جسے ہائی کورٹ نے رد کردیاتھا۔کورٹ نے دس سال کی سزاکورد کردیاتھا، لیکن آرمس ایکٹ میں ملی سزاکوبرقراررکھاتھا۔کورٹ آرمس ایکٹ کے دوکیس میں 10سال اور5سال کی سزادی تھی۔شہاب الدین فی الحال مختلف معاملوں میں دہلی کے تہاڑجیل میں بندہیں۔
دراصل،شہاب الدین نے سال 1996کے لوک سبھاالیکشن میں انتخابی بوتھ پرگڑبڑی پھیلانے کے الزام میں گرفتارکرنے نکلے ایس پی ایس کے سنگھل پرگولی چلادی تھی۔اس معاملے میں الزام تھاکہ خودشہاب الدین نے گولیاں داغی اورایس پی سنگھل کوجان بچاکربھاگنا پڑا۔اس معاملے میں بھی شہاب الدین کودس سال کی سزاہوچکی ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *