فیس نہیں دینے پرمعصوموں کوتہہ خانے میں قیدکیاگیا،معاملہ درج

school-KG-students
قومی راجدھانی دہلی کے چاندنی چوک میں واقع ایک اسکول میں معصوموں کوبیسمنٹ (تہہ خانے )میں بندکرنے کا معاملہ سامنے ایاہے۔اسکول نے انسانیت کی ساری حدیں پارکرتے ہوئے اپنے اسکول کے 16بچوں کواسلئے یرغمال بنالیا کیونکہ بچوں کے فیس جمع نہیں کی تھی۔یہ واقعہ رابعہ گرلزپبلک اسکول میں پیش آیاہے۔بتایاجارہاہے کہ ایک مہینے کی فیس 3ہزارروپے ہے۔دراصل، جب چھٹی کے وقت گارجین بچوں کواسکول لینے گئے توپتہ چلاکہ بچوں کوبیسمنٹ میں بند کردیاگیا ہے۔ اس کے بعدگارجین ہنگامہ کرنے لگے۔یہ پورامعاملہ پیرکاہے لیکن بچوں کواندر رکھے جانے کا ویڈیومنگل کوسوشل میڈیا پروائرل ہواتوپوری کہانی کا خلاصہ ہوا۔
میڈیارپورٹس کے مطابق، اسکول کے ایک سینئرٹیچرنے کہاکہ ضابطے کے مطابق، اسکول کی فیس ہرمہینے کی 30تاریخ تک جمع کی جانی چاہئے۔اگرفیس جمع نہیں کی جاتی ہے تواسٹوڈنٹ کوکلاس میں حصہ لینے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔دہلی پولس کے مطابق، نے اسکول فیس ادانہیں کرنے پرکے جی کے بچوں کوبیسمنٹ میں بندکرنے کولیکراسکول کے خلاف معاملہ درج کیاہے۔پولس نے بتایاکہ کچھ گارجینوں نے اسے اس بات کی جانکاری دی کہ وسط دہلی حوض قاضی علاقے میں ٹیچروں نے 16بچوں کوصبح سات بجے سے دوپہربارہ بجے تک بند کررکھا۔بہرکیف تھانہ حوض قاضی میں اسکول کے خلاف ایف آئی آرنمبر18/0091آئی پی سی کی دفعہ 342اورجویونائل جسٹس 75کے تحت ایف آئی آردج کردی گئی ہے۔پولس معاملے کی جانچ کررہی ہے۔
اس معاملے کے سامنے آنے کے بعد دہلی نائب وزیراعلیٰ منیش سسودیا نے ٹویٹ کرکے اسکول انتظامیہ پرسخت کارروائی کے حکم دےئے ہیں۔انہو ں نے لکھاکہ اسکول کی اس حرکت سے میں خود حیران ہوں ۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *