پروفیسر شافع قدوائی ادبی ایوارڈ ’اقبال سمّان‘ سے سرفراز

PROF-SHAFEY-KIDWAI
حکومتِ مدھیہ پردیش نے علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے شعبۂ ترسیل عامہ کے پروفیسر اور نامور نقاد و اسکالر پروفیسر شافع قدوائی کو اپنے باوقار ادبی ایوارڈ ’’اقبال سمّان‘‘ سے نوازا ہے۔ یہ ایوارڈ دو لاکھ روپئے نقد انعام پر مشتمل ہے ، جو پروفیسر قدوائی کو اردو ادب کے فروغ کے لئے ان کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے دیا گیا ہے۔ اردو اور انگریزی میں پروفیسر شافع قدوائی کی 12؍کتابیں شائع ہوچکی ہیں۔ ان کی کتاب ’’اردو لٹریچر اینڈ جرنلزم : کریٹیکل پرسپیکٹیو‘‘ کو کیمبرج یونیورسٹی پریس، نئی دہلی نے شائع کیا ہے۔ ان کی کتاب ’’سوانح سرسید‘‘ نے سرسید مطالعات میں ایک نئے باب کا اضافہ کیا ، کیونکہ اس سے ’’حیاتِ جاوید‘‘ میں شامل متعدد تاریخی غلطیوں کی تصحیح ہوئی۔ پروفیسر قدوائی کی ایک اہم کتاب ’’سرسید: اے لائف اِن ریزن‘‘ کو آکسفورڈ یونیورسٹی پریس شائع کررہا ہے، جس کا مقدمہ نامور مؤرخ پروفیسر عرفان حبیب نے تحریر کیا ہے۔
ادب اور صحافت و ثقافت کے موضوع پر پروفیسر شافع قدوائی کا پندرہ روزہ کالم ’’گوئنگ نیٹیو‘‘ انگریزی اخبار ’’دی ہندو‘‘ کے فرائی ڈے ریویو میں پابندی سے شائع ہوتا ہے۔ وہ دیگر اردو و انگریزی جرائد میں مستقل لکھتے رہتے ہیں۔ پروفیسر قدوائی ’سرسوتی سمّان‘ کی اردو کمیٹی کے کنوینر ہیں۔ وہ ترسیل عامہ کے متعدد ممتاز مجلّوں کے ادارتی بورڈ میں بھی شامل ہیں۔

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *