بارش کے موسم میں ڈینگو سے بچاؤ کے لئے احتیاطی تدابیر

dengue
بارش کے موسم میں ڈینگو کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔ اس کے پیش نظر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر علی جعفر عابدی نے یونیورسٹی علاقہ میں ڈینگو کی روک تھام کے لئے سبھی کو احتیاطی تدابیر اپنانے کا مشورہ دیا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ ڈینگو کا مچھر دن میں کاٹتا ہے اور کئی دن سے جمع پانی میں پیدا ہوتا ہے۔ ڈاکٹر عابدی نے کہا کہ بارش کے موسم میں چھتوں پر یا صحن و آنگن وغیرہ میں موجود ڈبوں، بوتلوں میں پانی جمع ہوجاتا ہے جس میں ڈینگو کا مچھر آسانی سے پیدا ہوتا ہے۔
انھوں نے بتایا کہ علی گڑھ میں عام طور سے جولائی سے اکتوبر کے درمیان ڈینگو پھیلتا ہے۔ چنانچہ اس سے بچنے کے لئے ضروری ہے کہ چھتوں اور آنگن سے ڈبوں، بوتلوں وغیرہ کو ہٹادیا جائے تاکہ پانی جمع نہ ہونے پائے ۔ اس کے علاوہ کولر کو مستقل طور سے صاف رکھا جائے اوراس کے پانی کو ہر ہفتہ مکمل طور سے تبدیل کیا جائے۔ اوورہیڈ ٹینک کو بند رکھا جائے ، چھتوں پر اور آنگن میں خالی ٹینکوں ، ڈبوں و بوتلوں کو ہٹادیں یا انھیں صاف ستھرا رکھا جائے اور اس میں پانی نہ جمع ہونے دیں، گملوں میں بھی پانی نہ جمع ہونے دیں ۔ یونیورسٹی کے طلبہ طالبات کو مشورہ دیتے ہوئے ڈاکٹر عابدی نے کہاکہ مچھروں سے بچنے کے لئے پوری آستین کی شرٹ پہنیں اور مچھروں کو اپنے آس پاس نہ پنپنے دیں۔اس کے علاوہ گھروں میں دروازوں اور کھڑکیوں پر جالی لگائیں تاکہ مچھر اندر نہ آسکیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *