پاکستان انتخابات:ووٹنگ جاری،پہلی بار کثیرتعداد میں خواتین قسمت آزمارہی ہیں

pak-voting
پاکستان کے لئے آج کا دن کافی اہم ہے، کیونکہ آج پاکستان کے عوام اپنے نئے وزیراعظم منتخب کرنے کیلئے ووٹ ڈال رہے ہیں۔یہ انتخابات اس بار اسلئے بھی خاص ہے کیونکہ اس عام انتخابات میں 171خواتین قسمت آزمارہی ہیں۔یہ پہلا موقع ہے ،جب اس ملک میں اتنی بڑی تعداد میں خواتین الیکشن لڑرہی ہیں۔171خواتین میں 70آزادامیدوارہیں۔ پاکستان میں آج نیشنل اسمبلی کی 272سیٹوں کیلئے ووٹ ڈالے جارہے ہیں۔پاکستان میں بدھ کو قومی اسمبلی اور چار ریاستی اسمبلیوں کیلئے ووٹ ڈالے جارہے ہیں۔شام چھ بجے تک یہ ووٹنگ چلے گی۔ آج ہی ووٹوں کی گنتی بھی شروع ہوجائے گی۔ اس کے بعد طے ہوجائے گا کہ عمران خان ، شہباز شریف یا پھر بلاول بھٹو میں سے کون پاکستان کا اگلا وزیر اعظم ہوگا۔ قومی اسمبلی اور چار ریاستی اسمبلیوں کے انتخاب میں حصہ لینے کے لئے 12570 امیدوار میدان میں ہیں۔قومی اسمبلی کے لے 3675 امیدوار اور چار ریاستی اسمبلیوں کے لئے 8895 امیدوار میدان میں ہیں۔ الیکشن کمیشن کے مطابق انتخاب کے لئے 105.96 ملین ووٹر حق رائے دہی کی اہلیت رکھتے ہیں۔ پورے ملک میں 85307 پولنگ اسٹیشن بنائے گئے ہیں۔ بیس ہزار سے زائد پولنگ اسٹیشن بہت ہی حساس ہیں،جن پر نظر رکھنے کے لئے اندر اور باہر کیمرے لگائے گئے ہیں۔ چار لاکھ پچاس ہزار پولیس کے جوان اور تین لاکھ فوجیوں کو الیکشن کے دن تعینات کیا جائے گا۔ پنجاب میں شفاف انتخاب کے لئے تمام تیاریاں مکمل ہوچکی ہیں۔
سابق وزیر اعظم بے نظیر بھٹو کی بیٹی بختاور اور آصفہ نے سندھ صوبہ کے نواب شاہ میں اپنے حق رائے دہی کا استعمال کیا۔ الیکشن میں بے نظیر کے بیٹے اور پی پی پی سربراہ بلاول بھٹو میدان میں ہیں۔ پاکستانی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق خیبرپختونخوا کے حلقہ پی کے 47 نواں کلی میں عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے کارکنوں میں فائرنگ کا واقعہ پیش آیا ہے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا جارہا ہے کہ اس واقعہ میں پی ٹی آئی کے ایک کارکن کی موت ہوگئی ہے جبکہ 2 زخمی ہوگئے ہیں۔
میڈیارپورٹس کے مطابق،پاکستان میں 8 قومی اسمبلی اور صوبائی اسمبلی کی سیٹوں پر آج ووٹ نہیں ڈالے جارہے ہیں۔ ان میں میں قومی اسمبلی کے دو حلقے این اے 60 راولپنڈی اور این اے 103 فیصل آباد جبکہ صوبائی اسمبلیوں کے حلقے پی کے 78 پشاور، پی کے 99 ڈیرہ اسماعیل خان، پی پی 87 میانوالی، پی پی 103 فیصل آباد، پی ایس 87 ملیر اور پی بی 35 مستونگ شامل ہیں۔پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے ماڈل ٹاؤن لاہور، سابق اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے سردار ہائی اسکول گڑھی شاہواور جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن نے ڈیرہ اسماعیل خان میں اپنے حق رائے دہی کا استعمال کیا۔
پاکستان کے عام انتخابات میں دہشت گردوں کا بھی سایہ ہے۔ اس بار دہشت گردوں کے خودکش حملوں سے انتخابی تشہیری مہم کافی متاثر ہواہے۔گذشتہ دوہفتے میں ہوئے حملوں میں تین امیدوارسمیت 180لوگوں کی جان جاچکی ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *