لوک سبھا میں پی ایم مودی سے گلے ملے راہل گاندھی

rahul-modi
مودی سرکارکے خلاف پیش کئے گئے عدم اعتماد کی تحریک پرلوک سبھا میں بحث جاری ہے۔عدم اعتمادکی تحریک پرلوک سبھا میں سرکاراورایوزیشن کے بیچ آرپارکی ہنگامہ آآرائی بھی چل رہی ہے۔راہل گاندھی نے اپنی تقریرکے بعدپی ایم مودی کی سیٹ پرجاکران سے گلے ملے۔پی ایم مودی نے ہنستے ہوئے راہل گاندھی سے ہاتھ بھی ملایا اوران سے کان کچھ بات کہی۔راہل گاندھی نے کہاکہ ’’پی ایم مودی، بی جے پی اورآرایس ایس نے مجھے دھرم کا مطلب سمجھایاہے ۔آپ کیلئے میں پپوہوسکتاہوں، لیکن مجھے کوئی فرق نہیں پڑتا ہے۔
راہل گاندھی نے اپنی تقریرمیں کہاکہ ’پی ایم کا فرض بنتاہے کہ وہ دیش کواپنے دل کی بات بتائیں۔آج کسی شخص پرحملہ نہیں بلکہ امبیڈکرجی کے آئین پرحملہ ہوتاہے۔مودی جی کے وزیرقتل کرنے والوں کے گلے میں مالا ڈالتے ہیں۔راہل نے کہاکہ ملک میں کمزور آدیسواسی اوردلت کچلے جارہے ہیں لیکن پی ایم مودی کے منھ سے ایک لفظ نہیں نکلتا۔بھیڑتشدد پراتر آئی ہے ۔پی ایم کچھ نہیں بولتے ۔ راہل گاندھی نے کہاکہ مودی جی کے دل میں صرف بڑے بڑے سوٹ بوٹ ،بزنس مین کیلئے جگہ ہے۔باقی ہندوستان کیلئے ، غریبوں کیلئے ، کمزوروں کیلئے ان کے دل میں تھوڑی سی بھی جگہ نہیں ہے۔ وزیر اعظم نے کہا تھا کہ میں ملک کا چوکیدار ہوں ، میں وزیر اعظم نہیں ہوں ، مگر جب وزیر اعظم کے دوست کا بیٹا 16000 گنا اپنی آمدنی کو بڑھاتا ہے تو ان کے منہ سے ایک لفظ نہیں نکلتا۔راہل گاندھی نے کہاکہ ’جب میں اندرگیاتومودی جی آپ کے ممبران پارلیمنٹ بولے کہ آپ نے بہت اچھا بولا۔مودی اورامیت شاہ اقتدارچھوڑنا نہیں چاہتے ۔اکالی دل کی لیڈر میری طرف دیکھ کر مسکرارہی تھیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *