نربھیااجتماعی عصمت دری معاملے میں قصورواروں کی پھانسی کی سزابرقرار

نربھیااجتماعی عصمت دری کے قصوروارمکیش ،ونے اورپون کی پھانسی کی سزابرقراررکھی گئی ہے۔سپریم کورٹ نے اس معاملے میں نظرثانی کی عرضی خارج کردی ہے۔سپریم کورٹ نے آج نربھیاگینگ ریپ معاملے میں چارقصورواروں میں سے تین کی نظرثانی عرضی پرفیصلہ سنایاہے۔سپریم کورٹ نے تین قصورواروں کی عرضی خارج کردی ہے اوراب ان کی پھانسی کی سزاکوعمرقیدمیں نہیں بدلاجائے گا۔سپریم کورٹ نے کہاکہ ان کی پھانسی کی سزابرقراررہے گا۔یادرہے کہ ان تینوں نے سپریم کورٹ میں پھانسی کی سزاکے خلاف اپیل کی تھی۔چوتھے قصورواراکشے نے نظرثانی عرضی داخل نہیں کی تھی۔چاروں کوسپریم کورٹ نے پھانسی کی سزادی تھی۔ قصورواراسی طرح دوبارہ غورکرنے کامطالبہ کررہے ہیں۔
بتادیں کہ چارمئی کونربھیاگینگ ریپ معاملے میں سپریم کورٹ نے قصورواروں کی نظرثانی عرضی پرفیصلہ محفوظ رکھ لیاتھا۔خیال رہے کہ 16دسمبر2012کودہلی میں چلتی بس میں اجتماعی عصمت دری نے پورے ملک کوہلاکررکھ دیاتھا۔متاثرہ لڑکی کی دوران علاج سنگاپورکے اسپتال میں موت ہوگئی تھی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *