نواز شریف اور ان کی بیٹی مریم گرفتار،راولپنڈی کی اڈیالہ جیل منتقل

nawaz-and-maryam
پاکستان کے سابق وزیر نواز شریف اور ان کی بیٹی مریم نواز کو جمعہ کی رات یہاں ہوائی اڈے پر پہنچنے کے چند منٹ کے اندر گرفتار کر لیا گیا۔ دونوں کا پاسپورٹ ضبط کر لیا گیا ہے۔ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا پانے والے سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی بیٹی مریم نواز کو لندن سے واپسی پر لاہور سے گرفتار کر کے راولپنڈی کی اڈیالہ جیل منتقل کر دیا گیا ہے۔ان کا طیارہ جمعے کی رات تقریباً نو بجے لاہور کے ہوائی اڈے پر اترا جہاں انھیں گرفتار کر کے اسلام آباد بھیج دیا گیا۔ جہاں دونوں کو اڈیالہ جیل منتقل کیا گیا اور وہاں دونوں کا طبی معائنہ مکمل ہو گیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق ،گرفتاری سے قبل یعنی جیل سے منتقل ہونے سے پہلے مسٹر نواز شریف کو اپنی ماں سے ملنے کی بھی اجازت نہیں دی گئی۔واضح ہے کہ ان کی ماں نے گذشتہ ایک جذباتی ویڈیو جاری کر کے کہا تھا کہ ان کا بیٹا بے گناہ ہے اور اگر وہ جیل گیا تو وہ بھی اس کے ساتھ جیل جائیں گی۔
نواز شریف اور ان کی بیٹی مریم نواز احتساب عدالت کی جانب سے ایون فیلڈ ریفرنس میں بالترتیب مجموعی طور پر بالترتیب 10 اور 7 برس کی سزا سنائے جانے کے بعد جمعرات کی شب براستہ ابوظہبی پاکستان واپس روانہ ہوئے تھے۔
غور طلب ہے کہ پاکستان کی اینٹی کرپشن یونٹ قومی احتساب بیورو (نیب) کی عدالت نے آمدنی سے زیادہ جائیداد کے معاملے میں چھ جولائی کو اپنے ایک فیصلے میں نواز شریف کو 10 سال، مریم کو سات سال اور داماد کیپٹن صفدر کو ایک سال کی سزا سنائی تھی۔ اس کے علاوہ عدالت نے نواز شریف پر 80 لاکھ پاؤنڈ اور مریم پر 20 لاکھ پاؤنڈ کا جرمانہ بھی عائد کیا ہے۔
بہرکیف ان دونوں کی آمدسے قبل شہر میں کسی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کے لئے 10,000 سے زیادہ پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا تھا۔ انتظامیہ نے حکم جاری کیا تھا کہ جمعہ شام تین بجے سے لے کر رات 12 بجے تک شہر کے تمام موبائل فون بند رہیں گے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *