آرٹیفیشیئل انٹیلی جنس میں تعاون پرہندوستان اورمتحدہ امارات کے درمیان تاریخی معاہدہ

india-uae
نئی دہلی:27جولائی آج یہاں انویسٹ انڈیا اورمتحدہ عرب امارات کی وزارت برائے آرٹیفیشیئل انٹیلی جنس(مصنوعی ذہانت) کے باہمی تعاون کیلئے میمو(میمورنڈم ااف انڈراسٹینڈنگ) پردستخط ہونے سے ہندوستان اورمتحدہ عرب امارات کے درمیان روابط وتعلقات کے ایک نئے باب کا آغاز ہوا۔میموپردستخط انویسٹ انڈیا کے منیجنگ ڈائریکٹر اورسی ای او دیپک باگلا اورمتحدہ عرب امارات کے وزیرمملکت برائے آرٹیفیشےئل انٹیلی جنس عمرسلطان الاولامہ نے نئی دہلی میں واقع مشہورفائیواسٹارہوٹل اوبرائے میں منعقد ایک خصوصی تقریب میں کی۔
اس موقع پر اظہارخیال کرتے ہوئے ہندوستان کے مرکزی وزیر برائے کامرس، صنعت وسول ایوےئشن سریش پربھو نے توقع کی کہ اس سے دونوں ملکوں کواس مخصوص شعبہ میں بھی ایک دوسرے سے فائدہ اٹھانے کا موقع ملے گا جبکہ دیگرشعبوں میں پہلے سے گہرے تعلقات وروابط برقرار ہیں۔ انہو ں نے یہ بھی کہاکہ متحدہ عرب امارات کی یہ وزارت دراصل ویژن فراہم کرنے والی وزارت ہے جس کی اسے ہی نہیں بلکہ سبھی کوضرورت ہے۔
متحدہ عرب امارات کے وزیرمملکت عمرسلطان الاولامہ نے کہاکہ کسی بھی ملک کی تخلیقی اورترقی کرنے کی صلاحیت کا دارومدار اس پرہوتاہے کہ وہ کس طرح آرٹیفیشےئل انٹیلی جنس کواختیار کرتا ہے۔انہوں نے یہ بھی کہاکہ آئندہ برسوں میں ڈاٹا اورپروسیسنگ ایجادات اورتجارتی ترقی کیلئے بنیادی عناصر ہوں گے اورزیادہ مؤثر وعمدہ سروس ڈیلیوری سسٹم کی ریڑھ کی ہڈی بھی بنیں گے۔
انویسٹ انڈیا کے دیپک باگلا نے اظہارخیال کیاکہ دنیامیں سب سے تیزپھیلتی ہوئی مارکیٹ معیشت والا ملک ہندوستان اپنے انسانی سرمایہ اورایجادات ونئے آئیڈیاز اورمتحدہ عرب امارات کٹنگ ایج تکنیکوں کے گڑھ کے طورپر آرٹیفیشےئل انٹیلی جنس کے میدان میں فطری شراکت دار ہیں۔انہوں نے امیدکی کہ آرٹیفیشےئل انٹیلی جنس ہماری زندگی میں بڑاہی اہم کردار اداکرنے جارہاہے اورشراکت داری صرف ہندوستان اورمتحدہ عرب امارات کے شہریوں کیلئے ہی نہیں بلکہ پوری دنیاکیلئے حل پیش کرے گی۔
توقع ہے کہ ہندوستان اورمتحدہ عرب امارات کی اس آرٹیفیشےئل انٹیلی جنس میں شراکت داری سے آئندہ دہائی میں 20بلین امریکی ڈالر کے برابرمالی فائدہ ہوگا۔
اس موقع پر موجود نئی دہلی میں متحدہ عرب امارات کے کمرشےئل ایٹیچی اورمنسٹرپلینی پوٹینشےئری احمد سلطان الفلاحی نے فرمایاکہ اس معاہدہ سے دونوں ملکوں کومزیدقریب ہونے کا موقع ملے گا۔
عیاں رہے کہ اس مخصوص، اہم وغیرمعمولی شعبہ میں دونوں ممالک کے درمیان معاہدہ میں متحدہ عرب امارات کی وزارت عظمیٰ (پی ایم او) میں ریسرچ انالسٹ (تحقیقی تجزیہ نگار) محترمہ ریم بگّاش کی خصوصی دلچسپی کودخل ہے۔انہو ں نے ’چوتھی دنیا‘ اردوکے ایسوسےئٹ ایڈیٹر اے یوآصف سے کہاکہ اس معاہدہ سے دونوں ملکوں کوانوویشن اورترقی میں بے انتہافائدہ ہوگا ۔یہ دریافت کرنے پرکہ آرٹیفیشےئل انٹیلی جنس آخر ہے کیا اوران کے ملک نے پوری دنیا میں تنہااس تعلق سے مخصوص وزارت آخر کیوں بنائی ہے۔انہوں نے کہاکہ تخلیقی صلاحیتوں اورویژن کوابھارنے کیلئے یہ قدم اٹھایاگیاہے۔
اس موقع پروزارت کامرس وصنعت میں صنعتی پالیسی وپروموشن کے محکمہ کے سکریٹری رمیش ابھیشیک اوراین ایم سی ہیلتھ کےئراورمتحدہ عرب امارات ایکسچینج کے چےئرمین جی آرشیٹی کے علاوہ بڑی تعداد میں ماہرین وبزنس مین موجودتھے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *