ماب لنچنگ: سوشل میڈیا سے افواہوں پر ریاستیں نظر رکھیں: وزارت داخلہ

home-ministry
ملک بھرمیں بچہ چورودیگرماب لنچگ کے واقعات کوروزارت داخلہ نے سنجیدگی سے لیا ہے ۔اتناہی نہیں ،وزارت داخلہ نے ریاستی حکومتوں کو ایڈوائزری جاری کرکے ان واقعات پر قدغن لگانے کے لئے کہا ہے۔ ایڈوائزری میں کہا گیا کہ تمام ریاستیں اور مرکزکے زیرانتظام ریاستیں ان افواہوں پر کڑی نظر رکھیں اور ان پر روک لگانے کے لئے سخت اقدامات کریں۔
دراصل مرکزی وزارت داخلہ نے ریاستی سرکاروں اورمرکزکے تحت ریاستوں کوبھیجے گئے ایڈوائزری میں کہاہے کہ وہ ماب لنچنگ کے واقعات اورتیزی سے پھیلنے والی افواہوں کوروکے۔ وزارت داخلہ نے ریاستوں او رمرکز کے زیرانتظام ریاستوں سے سوشل میڈیا پر افواہوں کے ذریعہ بھیڑ کو مشتعل کرنے پر روک لگانے اقدامات کرنے کے لئے کہا ہے۔یادرہے کہ مہاراشٹر کی مشتعل بھیڑ نے گزشتہ اتوار کو مبینہ طورپر بچہ چوری گروہ کا رکن ہونے کے شبہ میں پانچ لوگوں کو پیٹ پیٹ کر قتل کردیا تھا۔ ملک کے کچھ دیگر حصوں میں بھی وہاٹس ایپ پرافواہ کے ذریعہ مشتعل بھیڑ نے اسی طرح کے واقعات کو انجام دیا ہے۔
مرکز نے کہا کہ ریاستی حکومت ضلع انتظامیہ کو حساس اور اس طرح کے واقعات کے اندیشہ والے علاقوں کا پتہ لگانے کی ہدایت دیں۔ ان علاقوں میں بیداری مہم چلاکر اعتماد سازی کے اقدامات کرنے پر بھی زور دیا گیا ہے۔ایڈوائزری میں بچوں کی چوری اور اغوا کے واقعات سے متعلق شکایتوں کی موثرطریقہ سے جانچ کرنے پر زور دیا گیا ہے۔ اس سے لوگوں میں خاص طورپر متاثرہ لوگوں میں سیکورٹی کا جذبہ پیدا ہوگا اور پولیس اور انتظامیہ پر ان کا اعتماد بڑھے گا۔مرکزی وزارت داخلہ نے ریاستوں سرکاروں سے کہاہے کہ وہ افواہ روکنے کیلئے احتیاطاً ضروری مثبت قدم اٹھائے۔
وزارت داخلہ نے ریاستوں کے پولس سے سائبرسیل کوافواہ پھیلانے والوں پرنظررکھنے کوکہاگیاہے۔سائبرسیل کوکہاگیاہے کہ وہاٹس ایپ اورفیس بک کے ذریعہ جعلی ویڈیواورجعلی نیوزڈالنے سے سختی سے نمٹنے کوکہاگیاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *