کسانوں کے بھی مسیحا تھے وی پی سنگھ

جن سابق وزرائے اعظم نے اپنے کاموںسے ملک کو ایک سمت دینے کا کام کیا، ان میں وشو ناتھ پرتاپ سنگھ کا نام نمایاں طور پر لیا جاتا ہے۔ اپنی وزارت عظمیٰ کی مدت کار میںانھوں نے کئی ایسے فیصلے لیے جو آج بھی قابل ذکر ہیں۔ کسانوں کے لیے کئے گئے ان کے کام آج کی سرکاروں کے لیے مثال ہیں۔ گزشتہ 25 جون کو وی پی سنگھ کی جینتی تھی۔ اس موقع پر کسان منچ کی طرف سے دہلی کے کانسٹی ٹیوشن کلب میں ایک پروگرام منعقد کیا گیاجس میںملک بھر سے آئے کسانوں ، کسان لیڈروں اور ان سبھی کو نوازا گیا جو الگ الگ علاقوں میں رہ کر بھی کسانوں کی بھلائی کا کام کر رہے ہیں۔ اس پروگرام میںشرد یادو اور اتل انجان جیسی شخصیات نے وی پی سنگھ کے ’یوگدان‘ کو یاد کیا، وہیں کئی بڑے کسان لیڈروں نے کسانوںکے لیے دیکھے گئے ان کے خوابوںکو پورا کرنے کی سمت میںکام کرنے کا عہد کیا۔ وی پی سنگھ کی کابینہ میںوزیر رہے کیسری سنگھ گجرنے اس پروگرام کی صدارت کی، جبکہ کسان منچ کے قومی صدر ونود سنگھ نے نظامت کے فرائض انجام دیے۔
اس پروگرام میںآئے سبھی لوگوں نے وی پی سنگھ کو یاد کرتے ہوئے ان کے دکھائے ہوئے راستوں پر چلنے کی بات کہی۔ لوک تانترک جنتا دل کے سرپرست شرد یادو نے کہا کہ ملک میںاقتصادی عدم مساوات بڑا مسئلہ ہے اور اس کی ماں ہے سماجی مسئلہ۔ وی پی سنگھ ہی وہ لیڈرتھے جنھوںنے اس بات کو سمجھا کہ سماجی عدم مساوات کو دور کر کے ہی اقتصادی عدم مساوات کو ختم کیا جا سکتا ہے۔ انھوںنے اس کے لیے اپنی سطح پر پوری کوشش کی اور اس کے لیے انھیں لانچھن بھی جھیلنا پڑے۔
کسانوں اور پسماندہ لوگوںکے لیے وی پی سنگھ کے ذریعہ کیے گئے کاموں کو یاد کرتے ہوئے چوتھی دنیا کے چیف ایڈیٹر سنتوش بھارتیہ نے کہا کہ وہ منظر سبھی کو یاد ہوگا جب وی پی سنگھ جھگیوں پر چلانے جارہے بلڈوزر کے آگے کھڑے ہو گئے تھے۔ یہ ان کے خیالات کی ہی طاقت ہے کہ آج وہ لوگ بھی ان کے بتائے گئے راستوں پر چل کر سماجی خدمت کے کام میںلگے ہوئے ہیں، جنھیں وی پی سنگھ صاحب کو سامنے سے دیکھنے کی خوش نصیبی نہیں مل سکی۔
سنتوش بھارتیہ نے اس پروگرام کے لیے کسان منچ کے قومی صدر ونود سنگھ کی ستائش کی اور یہ بھی کہا کہ ان دنوں جب وی پی سنگھ کسانوں کے لیے کام کر رہے تھے تو ونود سنگھ کی سرگرمیوں کی وہ تعریف کرتے تھے۔ سی پی آئی لیڈر اتل انجان نے وی پی سنگھ کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ راشٹریہ مورچہ کی ان کی سرکار کے دوران ان کے ذریعہ کیے گئے سبھی کاموں نے اس وقت ملک کو ایک سمت دینے کا کام کیا ۔ خواہ وہ کسانوںکے لیے قرض معافی کی بات ہو یا سماجی انصاف کے لیے منڈل کمیشن کی سفارشوں کو لاگو کرنے کی ، ان کا ہر قدم سماج کے نچلے طبقے کے لیے فائدہ مند ثابت ہو۔

 

 

 

 

کسان پُتر اعزاز سے نوازی گئیںشخصیات
-1 کمل مرارکا، مشہور سماجی کارکن اور بانی مرارکا آرگینک
-2شرد یادو،سرپرست ،لوک تانترک جنتا دل
-3 سنتوش بھارتیہ، چیف ایڈیٹر، چوتھی دنیا
-4پون چاملنگ، وزیر اعلیٰ، سکم
-5 رام نواس گوئل، اسمبلی اسپیکر، دہلی
-6 پروین جڈیجہ،سابق وزیر ،گجرات
-7دلسنگار یادو،سابق وزیر اترپردیش اور اترپردیش کسان منچ کے پہلے صدر
-8 جے بھگوان جاٹو، کسان لیڈ،ر دہلی
-9رشی پال، بھارتیہ کسان یونین، دہلی
-10 شمشیر دہیا، کسان لیڈر ،ہریانہ
-11 امیش تیواری، کسان لیڈر، مدھیہ پردیش
-12 دھننجے دھوردے پاٹل، کسان لیڈر، مہاراشٹر
-13دیپک لارینس، کسان لیڈر، دہلی
-14بینا چودھری، سماجی کارکن، اتراکھنڈ
-15 سشیل بہوگنا، اتراکھنڈ
-16 اشوک سنگھ ، کسان لیڈر ، اترپردیش
-17 بھجمن بہرا، سابق مرکزی وزیر
-18کیسری سنگھ گجر، سابق مرکزی وزیر ، دہلی

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *