مسلم مجلس مشاورت کی جانب سے عیدملن تقریب کا انعقاد

eid-milan
نئی دہلی: آج کے موجودہ حالات میں عیدملن ایک ضرورت ہے اور الحمدللہ دہلی ریاستی مشاورت تین سالوں سے مسلسل اس کا اہتمام کرتی ہے۔ ان خیالات کا اظہار کا ریاستی مسلم مجلس مشاورت دہلی کے صدر عبدالرشید اگوان نے کیا۔ آپ نے تمام حاضرین اور مہمانوں کا استقبال کرتے ہوئے کہاکہ روزے کی تکمیل اوراس کے حصول کے طور پر اللہ رب العٰلمین نے ہمیں عید کا تحفہ دیا ہے آپ نے یہ بھی کہاکہ قرآن کا نزول بھی ایک بڑا تحفہ ہے۔ بہت خوشی ہے کہ اس بار کئی جگہوں پربشمول گرودوارہ بھرت نگر میں افطار پارٹی کا اہتمام ہوا اور برادران وطن میں تحفے وغیرہ تقسیم کئے گئے۔ مہمان خصوصی پروفیسر سوربھ واجپئی (دھلی یونیورسٹی) نے کہاکہ آج سینکڑوں سالوں سے دو نظرئے کام کررہے ہیں جس کی مدافعت کیلئے ہمیشہ تہوار جیسا ماحول بنانا ضروری ہے۔ انھوں نے مزید کھاکہ میں نے اپنے ذاتی تجربات سے جوہندو دھرم دیکھاہے اس میں وہ درندگی اور وحشیانہ عمل نہیں ہے جو آج ہورہا ہے۔ اور آپ نے یہ بھی کہا کہ اسوقت نیشنلزم بنام کمیونل ازم کی جنگ ہے اس میں عدم رواداری ایک اہم چیز ہے جس سے ہم اس کا مقابلہ کرسکتے ہیں۔ اس حوالے سے گفتگو میں مرکزی مشاورت کے جنرل سکریٹری مولانا عبدالحمید نعمانی نے کہا کہ زندگی میں دو پھلوہیں ایک خوشی اور دوسری غم لیکن اسلام نے ایک تیسرا پھلو اطمینان بتا یا ہے اور کہاکہ زندگی کا میلہ صرف میل ومحبت سے منایا جانا چاہئے۔ انڈین نیشنل لیگ کے نیشنل جنرل سکریٹری احمد، ڈاکٹر ادریس قریشی، راجندر جی، چیئر مین وراثت سکھ ازم ٹرسٹ،مولانا جنید بنارسی اور وارث حسین نے بھی اظہار خیال فرمایا۔
آخر میں صدارتی خطاب پیش کرتے ہوئے آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت کے قومی صدر نوید حامد صاحب نے کہاکہ روزہ ایک اصلاحی قدم ہے۔ آپ نے عید ملن کے حوالے سے کہاک ہم آھنگی کیلئے ٹوپی پھنانا ضروری نھیں بلکہ ایک دوسرے کی روایات اور عقائد کا احترام ہی اصلی ہندوستان ہے۔اوریہی مشاورت کا اصل مقصد ہے۔ نظامت کے فرائض ریاستی مشاورت سکریٹری جنرل منصور احمد نے انجام دیئے اور سامعین میں مزمل حسین، ابو سعید، فیضان عارش، نوراللہ خان، انجم صاحبہ، ڈاکٹر سعید وغیرہ موجود تھے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *