اگر 2019 میں بی جے پی جیتی توہندوستان ’’ہندو پاکستان‘ بن جائے گا:ششی تھرور ،بیان پربی جے پی کا حملہ

shashi
کانگریس لیڈرششی تھرور کے ’ہندوپاکستان ‘ والے بیان پرسیاسی ہنگامے اوربی جے پی کے حملے کے بعد کانگریس نے اپنا رخ صاف کردیاہے ۔کانگریس نے ششی تھرورکے اس بیان سے خود کوکنارہ کرلیاہے۔جبکہ دوسری طرف ششی تھرورنے صاف کردیاہے کہ اب بھی وہ اپنے بیان پرقائم ہیں۔دراصل، بدھ کو ترووننت پورم میں ایک پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے تھرور نے کہا کہ بی جے پی اگر2019کا الیکشن جیت جاتی ہے توملک ہندوپاکستان بن جائے گا۔ پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے تھرور نے کہا کہ بی جے پی اگرجیت جاتی ہے تووہ ایک نیا آئین لکھے گی جو ایک ایسے ملک کیلئے راستہ تیار کرے گا جو پاکستان کی طرح ہوگا اور جہاں اقلیتوں کے حقوق کا احترام نہیں کیا جائے گا۔ششی تھرور نے کہا کہ وہ(بی جے پی) ہندو راشٹر کے اصولوں کو قائم کریں گے جو اقلیتوں کیلئے مساوات کو دور کرے گا، جو ایک ہندو پاکستان بنائے گا اور مہاتما گاندھی ،نہرو، سردار پٹیل ، مولانا آزاد اور عظیم جانبازوں نے آزادی کی لڑائی اس کے لئے نہیں لڑی۔

تھرور کے اس بیان پر بی جے پی ترجمان سمبت پاترا نے ٹویٹ کر کیحملہ کیا۔انہوں نے ٹویٹ کرکے کہا کہ کانگریس صدر راہل گاندھی کو اس بیان کیلئے معافی مانگنی چاہئے۔سنت پاترا نے ٹویٹ میں لکھا کہ ششی تھرور کا کہنا ہے کہ اگر بی جے پی سال 2019 میں جیت جاتی ہے تو ہندوستان’ہندو پاکستان ‘ ہو جائے گا۔ سمبت پاترا نے کہا ششی تھرور نے جو کہا اس پر راہل گاندھی کو معافی مانگنی چاہئے۔کانگریس پاکستان کے بننے کی ذمہ دار تھی، کیونکہ ایک بارپھروہ ہندوستان کونیچادکھانے اورہندوستان کے ہندوؤں کوبدنام کرنے کا کام کررہی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *