اے ایم یو : جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج میں آٹومیٹک سی پی آر پر سی ایم ای پروگرام کا انعقاد

CME
جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے انستھیسیالوجی و کریٹیکل کیئر شعبہ کی جانب سے ’دل کا دورہ پڑنے کے دوران متاثرین کو بچانے کے لئے آٹومیٹک سی پی آر کے کردار ‘ کے موضوع پر سی ایم ای پروگرام منعقد کیا گیا جس میں ملک و بیرون ملک سے آئے متعدد ڈاکٹر، سائنسداں اور ماہرین شریک ہوئے۔ پروگرام کی افتتاحی تقریب میں بطور مہمان خصوصی شرکت کرتے ہوئے اے ایم یو کے پرو وائس چانسلر پروفیسر ایم ایچ بیگ نے کہاکہ دل کا دورہ کبھی بھی اور کہیں بھی پڑ سکتا ہے، لیکن متاثرین تبھی بچ سکتے ہیں جب انھیں اعلیٰ معیار کی آٹومیٹیڈ سی پی آر وقت پر فراہم کی جائے۔ انھوں نے کہا کہ متاثرین کو ہاتھ سے سی پی آر دینے کا رواج ہے جو عموماً معیاری نہیں ہوتی ہے اور اس سے زندگی بہت کم بچ پاتی ہے۔ پروفیسر بیگ نے کہاکہ آٹومیٹک سی پی آر مشینیں بہت کارگر ثابت ہورہی ہیں اور ان مشینوں کو بہتر طریقہ سے کیسے استعمال کیا جاتا ہے اس کو سیکھنا وقت کی ضرورت ہے۔

 

انستھیسیالوجی و کریٹیکل کیئر شعبہ کے سربراہ پروفیسر سید معید احمد نے کہاکہ مختلف سروے سے یہ پتہ چلا ہے کہ دل کا دورہ پڑنے کے تقریباً 60؍فیصد واقعات گھروں پر پیش آتے ہیں اور متاثرین میں سے 90؍فیصد لوگ اسپتال پہنچنے سے پہلے ہی فوت ہوجاتے ہیں۔ انھوں نے کہاکہ اس سی ایم ای پروگرام کا مقصد معالجہ کے ماہرین کو ٹکنالوجی کے میدان میں ہونے والی نئی پیش رفت سے واقف کرانا ہے اور اس سے شرکاء کی معلومات میں اضافہ ہوگا۔
پروفیسر احمد نے کہاکہ اے ایم یو کو اس بات پر فخر ہے کہ ہندوستان میں سی پی آر کی رہنما ہدایات تیار میں اس کی بھی شرکت ہے ۔فیکلٹی آف میڈیسن کے کارگزار ڈین پروفیسر شاہد اے صدیقی نے مہمانوں کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہاکہ طبی امداد پہنچنے تک آٹومیٹک سی پی آر متاثرہ شخص کو زندہ رکھ سکتا ہے ۔ افتتاحی تقریب کے بعد مہمان مقرر ڈاکٹر پال ریز (ڈُنڈے ہارٹ سنٹر، یوکے) نے ہائی کوالٹی سی پی آر کے موضوع پر خطاب کیا ، جب کہ پروفیسر سید معید احمد اور ڈاکٹر راکیش گرگ (ایمس، نئی دہلی ) نے’ سی پی آر کی ہندوستانی رہنما ہدایات: وقت کی ضرورت‘ کے موضوع پر اظہار خیال کیا۔
سنگاپور کی محترمہ جولیانا این جی نے سی پی آر پرفیکشن کے ٹولس کے موضوع پر اور ہالینڈ کے بیس وان ڈی وکّار نے ’آٹومیٹیڈ سی پی آر۔ آٹو پلس‘ کے موضوع پر گفتگو کی۔ سی ایم ای میں 130؍معالجین نے شرکت کی۔ اس موقع پر سوال و جواب کا سیشن بھی ہوا ۔ پروفیسر قاضی احسان علی نے شکریہ کی قرارداد پیش کی۔ نظامت کے فرائض ڈاکٹر شاہانہ علی نے انجام دئے۔ سی ایم ای کے انعقاد میں شعبہ کے اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر مناظر اطہر کا سرگرم تعاون رہا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *