رابعہ گرلز اسکول پبلک اسکول کے بچوں سے ملے کیجریوال ،جانئے کیا کہا

kejriwal
سینٹرل دہلی کے حوض قاضی میں رابعہ گرلزپبلک اسکول کی بچیوں کوتہہ خانے(بیسمنٹ) میں بندرکھنے کے معاملے کی جانکاری لینے آج جمعرات کووزیراعلیٰ اروندکجریوال اورنائب وزیراعلیٰ منیش سسودیااسکول پہنچے۔ دونوں نے اسکول انتظامیہ سے بات کرکے معاملے کی تیزی سے جانچ کرائے جانے کا بھروسہ دلایا۔کیجریوال نے عام آدمی پارٹی ٹویٹرہینڈ ل سے کہا کہ میں نے ان سبھی بچوں اور ان کے والدین سے بات چیت کی ہے۔مستقبل میں ایسا کوئی حادثہ نہ ہو اس کیلئے ہم نے پرنسپل کو سخت ہدایات دی ہیں۔ایف آئی آر درج ہو چکی ہے اور دہلی حکومت بھی اس حادثے کی جانچ کروائے گی۔قصور واروں کو بخشا نہیں جائے گا۔
خبریہ بھی ہے کہ کجریوال اورسسودیاکے دورے وقت رابعہ اسکول کے پرانے طالبات نے ہنگامہ کیا اوراسکول انتظامیہ کی حمایت میں نعرے بھی لگائے ۔وہیں سی ایم کجریوال نے کہاکہ جانچ میں قصوروارپائے گئے لوگوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔
خیال رہے کہ الزام ہے کہ اسکول انتظامیہ نے فیس کی ادائیگی نہ کرنے والے بچوں کو بیسمنٹ میں بند کردیا تھا۔ یہ معاملہ منگل کا ہے۔ میڈیا میں خبر یں آئی تھیں کہ(کے جی اورنرسری) چار اور پانچ برس کی تقریباََ 59بچیوں کو اسکول نے فیس جمع نہیں کرنے پر تقریباََ پانچ گھنٹے تک گرمی میں اسکول کے بیسمنٹ میں بند کردیا تھا۔دوسری جانب دہلی حکومت نے اس معاملے پر نوٹس لیتے ہوئے اسکول کو نوٹس جاری کیاہے۔ وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے اس پورے معاملے پر رپورٹ طلب کی ہے۔ کیجریوال نے محکمہ تعلیم کے ڈائریکٹر اور سکریٹری کو معاملے کی رپورٹ کے ساتھ طلب کیا ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *