رانچی:نمازتراویح پڑھاکرلوٹ رہے امام پرشرپسندوں کاحملہ

imam
ابھی سوشل میڈیاپرڈاکٹرکفیل خان کے بھائی کاشف جمیل کوغنڈوں کے ذریعے گولی مارے جانے کی خبروائرل ہی ہورہی تھی کہ جھارکھنڈ کے رانچی سے دل دہلادینے والی خبرآگئی۔سوشل میڈیاپرسرگرم اورسماجی کارکن سیدفرمان احمدکے فیس بک پوسٹ کے مطابق،رمضان کے اس پاک مہینے میں مولانا اظہرالاسلام اورمولاناعمران دونوں بھائی نمازتراویح اداکرکے رات قریب دس بجے رانچی راتو کے اگڑوگاؤں سے موٹرسائیکل سے اپنے گاؤں نیاسرائے واپس آرہے تھے ۔راستے میں دلادلی چوک کے پاس کچھ لوگو ں نے ان دونوں کوروک کرگالی دیتے ہوئے مارپیٹ کی اورکہنے لگے کہ ’جے شری رام کہو‘اورنہیں کہنے پرہاکی ڈنڈے سے مارنے لگے۔
بتایاجارہاہے کہ کسی طرح ایک بھائی مولانا عمران بچ کربھاگ نکلے ،لیکن دوسرے بھائی مولانا اظہرالااسلام کوبری طرح مارکرسنگین طورسے زخمی کردیا۔آناً فاناً انہیں کٹہل موڑکے رنچی اسپتال میں داخل کرایاگیا، لیکن وہاں سہی علاج نہ ہونے کے باعث انہیں میڈیکاہاسپیٹل لے جا یاگیاہے۔مولانا اظہرکی حالت کافی نازک بنی ہوئی ہے۔ادھر ڈاکٹرکفیل خان کے بھائی کی بھی حالت نازک ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *