سنت کبیرنگر: پی ایم مودی نے اپوزیشن کوآڑے ہاتھوں لیا،جانئے کیاکہا

modi
وزیراعظم نریندرمودی اترپردیش کے سنت کبیرنگرکے مگہرمیں پروگرام میں شرکت کرنے کیلئے آج جمعرات کی صبح پہنچے۔پی ایم مودی نے مگہرمیں سنت کبیرداس کیمزارپرچادرچڑھائی ۔ساتھ ہی انہو ں نے کبیراکادمی کا سنگ بنیاد رکھا۔اس موقع پرپی ایم مودی اجلاس کوخطاب کرتے ہوئے کہاکہ آج میری برسوں کی خواہش پوری ہوئی،مگہرآکربہت خوشی ہورہی ہے۔انہو ں نے کہاکہ سنت کبیرکے سمادھی پرپھول چڑھانے کا شرف حاصل ہوا۔ایساکہاجاتاہے کہ مگہرمیں ہی سنت کبیر، گرونانک دیواوربابا گورکھناتھ نے ایک ساتھ بیٹھ کرروحانی بات چیت کی تھی۔ پی ایم نے نام لئے بغیراکھلیش یادوکوآڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہاکہ پچھلی سرکارکوغریبوں کی فکرنہیں ہے صرف بنگلے کی فکرہے۔ انہوں نے کہاکہ ملک کوترقی سے جوڑاجارہاہے۔سرکارکا نعرہ ہے ’سب کا ساتھ سب کاوکاس۔‘پی ایم مودی نے کہاکہ مگہرمیں کبھی وکاس نہیں ہواتھا، سابق صدرجمہوریہ ہنداے پی جے عبدالکلام جی یہاں آئے تھے انہو ں نے اسے بین الاقوامی پہچان دلانے کی کوشش کی تھی۔اب ہماری سرکاراس جانب تیزی سے کام کررہی ہے۔ کبیرہمارے جدوجہدکی بنیادہے۔
بی جے پی کی اس پروگرام کو2019کے لوک سبھاکے مدنظرتشہیرکی شروعات کی شکل میں دیکھی جارہی ہے۔گویاپی ایم مودی نے لوک سبھاالیکشن سے پہلے اس کابگل اترپردیش سے پھونکاہے۔اس موقع پرمودی نے اپوزیشن کونشانے پرلیا ، سرکارکوجن مسئلوں پرگھیراجارہاتھاان سبھی مسئلوں کا جواب دیا۔تین طلاق کے مسئلے پرپی ایم نے اپوزیشن کوآڑے ہاتھوں لیا۔سرکارنے تین طلاق بل لوک سبھامیں توپاس کروالیا، لیکن راجیہ سبھامیں پاس نہیں ہوپایا۔پی ایم نے کہاکہ مسلم خواتین اس بل کے حمایت میں ہیں، ملک میں سبھی خواتین کوبرابری کاحق ملناچاہئے۔لیکن لگتاہے کہ اپوزیشن کویہ پسندنہیں ہے اوروہ اپنے ووٹ بینک کے بارے میں سوچ رہے ہیں۔بتادیں کہ اپوزیشن کا مطالبہ ہے کہ تین طلاق بل میں کچھ بدلاؤ کئے جائیں اسی وجہ سے بل راجیہ سبھامیں پاس نہیں ہوپایا۔
اس سے قبل آج پی ایم مودی صبح خصوصی طیارہ سے لکھنؤ اےئرپورٹ پہنچے ۔یہاں سی ایم یوگی ، نائب سی ایم دنیش شرما، کابینی وزیرآشوتوش ٹنڈن ، مےئربھاٹیانے پھولوں کاگلدستہ پیش کرکے استقبال کیا۔ رسمی ملاقات کے بعدمودی اورسی ایم یوگی دونوں چاپرسے مگہرکیلئے روانہ ہوگئے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *