بہتر ماحولیات کے لیے شجر کاری ضروری :ڈاکٹر بدرالدجیٰ

Plantation
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے سر سید ہال ساؤتھ میں پیڑ پودوں کی دیکھ بھال کرنے والے مالیوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے پروسٹ ڈاکٹر بدرالدجی نے کہا کہ ہاسٹل کی رونق و شادابی آپ ہی جیسے لوگوں کی وجہ سے ہے جس کی ہر سطح پر تعریف ہونی چاہئے۔ انہوں نے اچھے سے پودوں کی دیکھ بھال کرنے پر انعام و اکرام سے بھی نوازنے کا اعلان کیا۔
اس سے قبل پرووسٹ ڈاکٹربدرالدجی نے سرسید ہال ساؤتھ میں شجر کاری کی۔انہوں نے کہا کہ یہ کوئی ضروری نہیں ہے کہ یوم ماحولیات پر ہی اس جانب توجہ دی جائے بلکہ یہ دن تو صرف اس لیے ہے تاکہ ہم اس کو نہ بھولیں اور کم از کم ایک دن ہم اس جانب پوری طرح سے متوجہ ہو جائیں۔ انہوں نے کہا کہ آج ماحولیات کی تباہی کا سب سے بڑا سبب یہ ہے کہ لوگوں کو دروازے اور کرسی میز تو لکڑی کی چاہیے مگر وہ پودے نہیں لگائیں گے۔ انہوں نے کہا ہمیں اس سوچ میں تبدیلی کی ضرورت ہے۔
ڈکٹر بدرالدجی نے طلبہ سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ آپ یہاں صرف نصابی علم حاصل کرنے نہیں آئے ہیں بلکہ آپ یہاں زندگی جینے کا طریقہ سیکھنے آئے ہیں اس لیے کتابی دنیا سے باہر نکل کر بھی سوچئے۔ انہوں نے کہا کہ آج دنیا کوصحت بخش ماحولیات کی ضرورت ہے اور یہ اسی وقت ہو سکتاہے جب ہم اپنے ارد گرد پیڑ پودے لگائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جب اچھی فضا اور اچھا ماحول ملتاہے تو طبیعت میں نشاط ہوتی ہے اور ہر کام میں دل لگتاہے۔ یہی وجہ ہے کہ ہم نے سر سید کے بنایے ہوئے اس تاریخی ہال کو پیڑ پودوں سے سجا کر رکھا ہے جس میں ہمارے مالی بھائیوں کا بڑا اہم کردارہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے پڑھائی میں بھی دل لگتا ہے کیونکہ ماحول کی خوشگواری کے نفسیاتی اثرات مرتب ہوتے ہیں اس لئے آپ یہاں کے ذمہ داران کا تعاون کریں اور جب تک آپ ان کا تعاون کرتے رہیں گے ہمارا سر سید ہال اور ہماری یونیورسٹی سرسبز و شاداب اور خوبصورت بنی رہے گی۔
پرووسٹ ڈاکٹر بدرالدجی نے شجر کاری کی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوئے طلبہ سے اپیل کی کہ وہ جہاں بھی جائیں ایک پودا ضرور لگائیں، یہ ان کے لیے یادگار بھی ہوگا اور اس سے صحت بخش ماحولیات بھی وجود میں آئے گی۔ اس موقع پر پرووسٹ آفس کے ملازمین کے علاوہ طلبہ اور اور دیگر اہم ذمہ داران موجود تھے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *