دہلی:کرنٹ لگنے سے ایک طلبہ کی موت،تین زیرعلاج

electricity-pole
دہلی کے دوارکاعلاقے میں ایک طلبہ کی کرنٹ لگنے سے موت ہوگئی ہے،دیگرتین طلبااسپتال میں زیرعلاج ہیں۔دراصل،جمعرات کی رات بارش کے بعد رام پھل چوک پرچاردوست ایک ساتھ چائے پینے آئے تھے۔ اس بیچ ،ٹھنڈی ہوامیں باتوں -باتوں میں بھوپیش نے اپنا ہاتھ بی ایس ایس ایس کے پول سے متصل ایک سائن بورڈ پررکھ دیا۔بورڈ میں تیزکرنٹ تھا،جس کے باعث بھویش اسے چپک گیا۔تینوں دوستوں نے چھڑانے کی کوشش کی تو انہیں بھی کرنٹ لگ گیا۔اس بیچ وہاں پربھیڑجمع ہوگئی۔ شورسن کررام پھل چوک پرپٹرولنگ کررہے ہیڈ کانسٹیبل دیپک کمارشرمار اوردیپ موقع پرپہنچے۔دیپک کمارشرما نے بھویش کوبورڈ سے چھڑایا،پھراس کے باقی دوستوں کے ساتھ پاس کے وینکٹیشوراسپتال لے گئے،جہاں ڈاکٹروں نے بھویش کومردہ قراردے دیا۔تین دیگرکا علاج چل رہاہے۔ واقعہ دوارکاعلاقے کے رام پھل چوک کاہے۔بھویش، روپیش جین، جئیش اورایم رائے نام کے چاروں دوستوں نے سیکٹر7کی ایویشن اکیڈمی میں پائلٹ کے کورس میں داخلہ لیاتھا اورانسٹی ٹیوٹ کے پاس ہی پی جے میں رہتے تھے۔
بجلی کمپنی بی ایس ای ایس کے خلاف لاپرواہی کا کیس درج کیاگیاہے۔ وہیں بی ایس ای ایس کا کہناہے کہ پول میں اس کے تاروں سے کرنٹ پھیلا۔کھمبے میں کیبل ، انٹرنیٹ کے علاوہ بجلی چوری کیلئے لوگوں نے تارڈال رکھے ہیں، اسی میں سے ایک تارسے کرنٹ پھیلا تھا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *