گجرات:نروداپاٹیامعاملے میں 3قصورواروں کو10-10سال کی سزا

naroda-patya
گجرات کے نروداپاٹیامیں سال 2002فسادمعاملے میں گجرات ہائی کورٹ نے تین قصورواروں کو10-10سال کی سزاسنائی ہے۔ان کے نام امیش سورابھائی بھرواڑ، پدمیندر سنگھ جسونت راجپوت اورراجکمارعرف راجوگوپی رام چومل ہے۔اس کے ساتھ ہی عدالت نے ان تینوں پرایک ہزارروپے کا جرمانہ لگایاہے۔
غورطلب ہے کہ سال 2012کے ایک فیصلے میں تینوں قصورواروں امیش سورابھائی بھرواڑ، پدمیندر سنگھ جسونت راجپوت اورراجکمارعرف راجوگوپی رام چومل سمیت 29دیگرکوایس آئی ٹی کی خصوصی عدالت نے بری کردیاتھا لیکن اس کے بعدعرضیوں کی سنوائی کے دوران گجرات ہائی کورٹ نے اس سال 20اپریل کوتینوں کوآگ زنی کرنے اورتشددبھیڑکاحصہ بننے کا قصوروارپایا ،جبکہ باقی 29لوگوں کوبری کردیاتھا۔
واضح ہوکہ یہ واقعہ 27 فروری 2002 کو گودھرا میں سابرمتی ایکسپریس ٹرین جلائے جانے کے ایک دن بعد ہوا تھا۔ وشو ہندو پریشد نے 28 فروری 2002 کو بند کا اعلان کیا تھا۔اسی دوران نرودا پاٹیا علاقے میں مشتعل بھیڑ نے اقلیتی کمیونٹی کے لوگوں پر حملہ کر دیا تھا۔ مشتعل بھیڑ نے نرودا پاٹیا علاقہ میں کئی گھروں کو جلا دیا تھا۔ 97 لوگوں کا قتل کر دیا گیا تھا۔ 33 لوگ زخمی بھی ہوئے تھے۔یادرہے کہ گجرات کے گودھرامیں سابرمتی ایکسپریس ٹرین کے کچھ ڈبے جلائے جانے کے بعد بھڑکے دنگے میں نروداپاٹیامیں سب سے زیادہ تشدد والے علاقے میں سے ایک ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *