جموں وکشمیر میں گرینیڈ حملے کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم البدرنے لی

جموں وکشمیر میں شوپیاں کے بٹہ پورہ واقع مین چوک پر پیر کو ہوئے گرینیڈ حملے کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم البدر نے لی ہے۔ دہشت گرد تنظیم نے ویڈیو جاری کرکے کہا ہے کہ آگے بھی وہ سیکورٹی اہلکاروں پر ایسے ہی حملے کرتا رہے گا۔ دہشت گرد حمزہ بہان نے ویڈیو کے ذریعہ عام لوگوں کو دھمکی دی ہے کہ وہ سیکورٹی اہلکاروں سے دور رہیں، اس میں سیکورٹی میں تعینات جوانوں کو دھمکی دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ حملے مسلسل جاری رہیں گے۔
جموں وکشمیر: دہشت گرد تنظیم البدرنے لی گرینیڈ حملے کی ذمہ داری، ویڈیوجاری کرکے پھردی دھمکی
گزشتہ دنوں میں دہشت گردوں کے ذریعہ گیا گیا یہ 10 واں گرینیڈ حملہ تھا۔ پولیس کے ایک افسر نے بتایا کہ دہشت گردوں نے شوپیاں شہر میں سیکورٹی اہلکاروں پر گرینیڈ پھینکا، جس میں کم ازکم 12 شہری اور 4 پولیس اہلکار زخمے ہوگئے۔

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

واضح ر ہے کہ جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیان کے بٹہ پورہ میں پیر کے روز دہشت گردوں کی طرف سے سیکورٹی فورسز کو نشانہ بناکر کئے گئے گرینیڈ حملے میں 12 شہریوں اور چار پولیس اہلکاروں سمیت 16 افراد زخمی ہوگئے تھے۔ گرینیڈ دھماکے کے نتیجے میں ایک لڑکی شدید طور پر زخمی ہوئی تھی، جس کو علاج ومعالجہ کے لئے سری نگر منتقل کیا گیا ہے۔ریاستی پولیس کے ایک ترجمان کہا کہ دہشت گردوں کی طرف سے داغے گئے گرینیڈ کے پھٹنے سے 12 شہری اور چار پولیس اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔ انہوں نے بتایا ’گرینیڈ سڑک کے کنارے پھٹ گیا ، جس کے نتیجے میں وہاں موجود عام شہریوں کی ایک بڑی تعداد زخمی ہوگئی۔ ترجمان نے کہا کہ دھماکے میں مبینہ طور پر 12 عام شہری زخمی ہوئے ہیں۔ ایک جواں سال لڑکی کے شدید طور پر زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔ حملے میں 4 پولیس اہلکار بھی زخمی ہوئے‘۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *