وزیروں کے ساتھ ایل جی کے گھردھرنے پربیٹھے سی ایم کیجریوال،جانئے کیاہیں مطالبات

kejriwal
دہلی کے وزیراعلیٰ اروندکیجریوال اپنے مطالبات کولیکرایل جی انل نیجل کے رہائش گاہ پردھرنے پربیٹھ گئے ہیں۔انہوں نے کہاکہ جب تک ان کی مانگ پوری نہیں ہوگی، تب تک وہ بیٹھے رہیں گے۔کجریوال آئی اے ایس افسروں کے ہڑتال کوختم کرنے کی مانگ کررہے ہیں۔بہرحال دہلی کی’آپ‘ سرکاراورلیفٹیننٹ گورنرانل بیجل کے بیچ ایک بارپھرگھمسان کی صورتحال پیداہوگئی ہے۔ دہلی کے وزیراعلیٰ اروندکیجریوال اپنے کچھ وزیروں کے ساتھ ایل جی انل بیجل کے گھر دھرنے پربیٹھ گئے ہیں۔ کیجریوال کے ساتھ دہلی کے ڈپٹی سی ایم منیش سسودیا ، کابینی وزیرگوپال رائے اورستیندرجین بھی موجودہیں۔عیاں رہے کہ کیجریوال کام کاج کابائیکاٹ کرنے والے افسروں کے خلاف کارروائی کامطالبہ کررہے ہیں۔ان کا الزام ہے کہ ایل جی اس معاملہ میں ڈھیلاڈھالارویہ اپنارہے ہیں۔کسی طرح کی کارروائی نہیں کی جارہی ہے۔وہیں منیش سسودیا نے مطالبہ کیاہے کہ ایل جی کام روکنے والے آئی اے ایس افسروں کے خلاف سخت ایکشن لیں، اورراشن کی ڈوراسٹیپ ڈیلیوری کی اسکیم کومنظورکریں۔ عام آدمی پارٹی لیڈروں کا کہنا ہے کہ جب تک ان کے مطالبات پورے نہیں ہوتے وہ ایل جی ہاؤس نہیں چھوڑیں گے۔
وہیں ایل جی انل بیجل نے کہاہے کہ سی ایم نے دھمکی بھرے اندازمیں افسروں کی ہڑتال ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔انہوں نے کہاکہ افسروں بے اعتمادی اورخوف کا ماحول ہے،جسے سی ایم ہی دورکرسکتے ہیں۔بیچل نے یہ بھی کہاہے کہ ڈوراسٹیپ راشن ڈلیوری کی فائل تین مہینے سے وزیرعمران حسین کے پاس ہے۔ساتھ ہی اس اسکیم کومرکز کی منظوری ضروری ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *