اسدالدین اویسی کاپرنب مکھرجی اورکانگریس پرحملہ

Owaisi
حیدرآباد میں ایک پروگرام کے دوران جمعہ کوآل انڈیامجلس اتحادالمسلمین(اے آئی ایم آئی ایم) کے قومی صدر اوررکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے سابق صدرجمہوریہ ہند پرنب مکھرجی کے آر ایس ایس کے پروگرام میں حصہ لینے پرکانگریس نشانہ سادھاہے۔اویسی نے پرنب مکھرجی اورکانگریس کی سخت تنقیدکی ہے۔انہو ں نے کہاکہ ’کانگریس ختم ہوگئی‘۔ انہو ں نے کہاکہ جوشخص 50سالوں تک کانگریس میں رہا اورپھرملک کا ملک کاصدررہاہو،وہ آرایس ایس کے ہیڈکوارٹرپہنچ گیا۔کیااب بھی آپ لوگ اس پارٹی(کانگریس ) سے امیدکرتے ہیں۔
اس دوران اویسی نے کانگریس کے ساتھ ساتھ بی جے پی پربھی جم کربولا۔انہو ں نے کہاکہ بی جے پی کی قیادت والی این ڈی اے گٹھ بندھن کی سرکارکے چارمیں فرقہ وارانہ واقعات میں اضافہ ہواہے۔

 

یادرہے کہ 7جون کوسابق صدرجمہوریہ ہندپرنب مکھرجی آایس ایس کے ہیڈکوارٹرمیں منعقدہ پروگرام میں حصہ لینے پہنچے تھے۔ان کے جانے کے فیصلے پرکانگریس لیڈروں نے ہی کئی بیان دےئے تھے اوران سے پھرغورکرنے کی اپیل کی تھی۔اتناہی نہیں پرنب مکھرجی کی بیٹی شرمشٹھامکھرجی نے بھی اپنے والدنصیحت دی تھی اورناراضگی کا اظہارکیاتھا۔لیکن پرنب مکھرجی نے اپنے پروگرام میں بدلاؤ نہیں کیا۔ناگپورجاکر پہلے توپرنب مکھرجی نے سنگھ کے بانی ڈاکٹر ہیڈگوارکے بارے میں وزیٹرڈائری میں لکھاکہ وہ بھارت ماتاکے عظیم سپوت تھے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *