جھارکھنڈ میں بھوک سے ایک اور خاتون کی موت

جھارکھنڈ کے چترام میں مبینہ طور پر بھوک سے موت کا معاملہ در پیش ہوا ہے ۔ خاتون کے شناخت مینا بتائی جا رہی ہے ۔اور ساتھ ہی بتایا یہ بھی بتایا جا رہا ہے کہ وہ کچرا بینے کا کام کرتی تھی ۔قابل ذکر ہے کہ کچرے بنے میں چار دن سے کوئی کمائی نہیں ہوئی تھی اور گھر میں کھانے کے لئے ایک دانہ بھی نہیں تھا۔ اس حادثہ کا ایک ویڈیو بھی وائرل ہوا ہے ، جس میں مردہ مہلوک کا بیٹا اپنی ماں کا لاش کندھے پر لادکر اسپتال جا رہا ہے ۔ بتا دیں کہ جھارکھنڈ میں بھوک سے دوسری موت تھی۔ اس سے پہلے ہفتہ کے روز گریڈیہ میں بھی ایک خاتون کی موت ہو گئی تھی۔
خبر کے مطابق ، خاتون اور ان کا بیٹا ایٹکھوری کے پریم نگر کے آس پاس رہتے تھے۔ مہلوک کے بیٹے نے بتایا کہ انہونے اور ان کی ماں نے گزشتہ دس دنوں سے کچھ نہیں کھایا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ دس روز سے ان کی کچرا بینے میں کوئی کمائی نہیں ہوئی تھی ، جس وجہ سے گھر میں کھانے کا کوئی سامان نہیں تھا۔ پیر کے روز اس کی ماں کی صحت اچانک خراب ہوئی تو انہیں کندھے پر لادکر اسپتال پہنچایا ، جہاں ڈاکٹروں نے انہیں مردہ قرار دے دیا۔

 

 

 

 

 

 

 

 

 

چترا اسپتال کے سیول سرجن ڈاکٹر ایس پی سنگھ نے بتایا کہ جب مریض کو اسپتال میں لایا گیا تھا تب اس کی موت ہو چکی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ خاتون کی موت کس وجہ سے کوئی اس کا پتہ پوسٹمارٹم کی رپورٹ کے بعد ہی چلےگا۔
مزید انہوں نے کہا کہ جب بیٹا خاتون کولے کر اسپتال پہونچا تو ڈاکٹروں نے بنا کسی تاخیر کے خاتون کا علاج شروع کر دیا ، جس میں پایا گیا کہ خاتون کی موت ہو چکی ہے ۔ اسپتال انتظامیہ نے معاملہ کی خبر پولیس کو دے دی ، جس کے بعد پولیس نے لاش کو قبضہ میں لے کر پوسٹمارٹم کے لئے بھیج دیا ہے ۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *