سپریم کورٹ کا بڑافیصلہ:کرناٹک میں کل شام 4بجے ہوگافلورٹیسٹ

supreme-court
نئی دہلی : کرناٹک کے گورنر کے ذریعہ بی جے پی کو حکومت سازی کی دعوت کے خلاف کانگریس ۔ جے ڈی ایس کی عرضی پر سپریم کورٹ میں سماعت ہوئی۔ سپریم کورٹ نے فیصلہ سناتے ہوئے بی جے پی کوبڑا جھٹکادیاہے۔ سپریم کورٹ نے کہاہے کہ کرناٹک میں یدی یورپا کوکل شام 4بجے اکثریت ثابت کرنی ہوگی۔بی جے پی کے وکیل مکل روہتگی نے سپریم کورٹ میں کہاہے کہ یدی پورپا سرکارکل فلورٹیسٹ کیلئے تیارنہیں ہے۔انہو ں نے کہاکہ ایک دن بہت کم ہے ۔سرکارکوزیادہ دن ملنے چاہئے۔
کورٹ اس عرضی پردوبارہ سنوائی کررہی ہے، جس میں کانگریس اورجے ڈی ایس نے گورنروجوبھائی والا کے ذریعہ یدی یورپاکوسرکاربنانے کیلئے بلانے کے خلاف چیلنج کیاہے۔سپریم کورٹ نے کہاکہ دونوں فریقوں کواپنے اپنے دعوے ہیں۔ ہم قانون کے تحت فیصلہ کریں گے۔قانونی سرگرمیوں پرعمل ہوناچاہئے۔کرناٹک معاملے پرسپریم کورٹ کا بڑافیصلہ آیاہے۔کرناٹک میں کل شام 4بچے فلورٹیسٹ ہوگا۔
کپل سبل نے کہاکہ سرکاربنانے کیلئے دعوتگٹھ بندھن کے ساتھ سب سے بڑی پارٹی کوملنی چاہئے یاحاصل شدہ اکثریت والی پارٹی کو۔اے ایس جی تشارمہتانے کہاکہ گورنرکوکانگریس اورجے ڈی ایس سبھی ممبران کے دستخط لیٹرکبھی نہیں ملا۔
سپریم کورٹ میں کمارسوامی کی جانب سے پیش ہوئے کپل سبل نے کہاکہ ایسے معاملوں میں گورنرکواپنے اختیارات کا استعمال نہیں کرناچاہئے۔سنگھوی نے کہاکہ یدی یورپا نے کہاکہ ہمارے ساتھ فلاں فلاں رکن اسمبلی ہیں، لیکن اے بی سی کون کون ساتھ ہیں۔دوسری جانب کانگریس -جے ڈی ایس نے سبھی 117ممبران کے نام لکھ کرگورنرکودےئے۔جسٹس سیکری نے کہاکہ یا توآپ قانون کے تحت چلیں یاپھرہفتہ کواسمبلی میں اکثریت ثابت کریں۔یہ آپ کوانتخاب کرناہے، دوسرآپشن زیادہ عملی ہے۔ادھرفیصلے کے بعدکانگریس نے کہاکہ قانون کی جیت ہوئی ہے ۔کانگریس نے کہاکہ عدالت نے جمہوریت کوبرقراررکھاہے۔سماعت کے دوران مکل روہتگی نے عدالت میں کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کو ناپاک قرار دیا ۔ کانگریس کی طرف سے ابھیشیک منو سنگھوی نے کانگریس کے ممبران پارلیمنٹ کی سیکورٹی کا بھی مطالبہ کیا ۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *