رمضان میں حسن اخلاق اور خدمت خلق کا اعلیٰ نمونہ پیش کریں :علماء کرام

ulema
دیوبند:متبرک مہینہ رمضان المقدس کے پیش نظر یہاں کے نورانی ماحول میں خاطر خواہ اضافہ ہوتا جارہا ہے اور رمضان کی آمد کی خوشیوں کو لے کر فرزندان توحید کے چہروں پر نورانیت نمایاں طور پر نظر آرہی ہے ، نیز یہاں کی بازاروں کی رونقیں بھی دوبالا ہوگئیں ہیں اور سبھی مسلم محلوں کی گلیاں گلزار ہوتی جارہی ہیں ۔ رمضان جیسے عظیم مہینہ کے بابت دیوبند کے سرکردہ علماء نے بیک اک زبان مسلمانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اس مہینہ میں صبر و تحمل کا مظاہر ہ کرتے ہوئے حسن اخلاق اور عوامی خدمت گاری کا اعلیٰ نمونہ پیش کریں ۔

 

ممتاز دینی درسگاہ دارالعلوم زکریاہ کے مہتمم مفتی شریف خان قاسمی نے کہاکہ مسلمانوں کو عالمی موسم کا تہہ دل سے استقبال کرتے ہوئے اس ماہ رمضان المبارک کی تخصیص کردہ عبادتوں اور ذکر و اذکار یکسوئی سے اہتمام کرنا چاہئے ۔ انہوں نے قرآن پاک کی عظمت کو بتاتے ہوئے کہاکہ رمضان کی سب سے بڑی وجہ انسانیت کی ہدایت کا بنیادی وجہ قرآن کریم کو اس ماہ مبارک میں نازل کیا گیا ، نیز رمضان و قرآن کا باہمی گہرا ربط ہونے کی وجہ سے عالم انسانیت کے لئے یہ دونوں چیزیں عالمی امن و اخوت کا پیمانہ بن جاتی ہیں ، تاہم مسلمانوں کو چاہئے کہ رمضان ماہ کو غنیمت جانتے ہوئے اپنا ہر لمحہ اس کی قدر او رعبادت و ریاضت میں گذارنی چاہئے ۔
آل انڈیا اقتصادی کونسل کے چیئرمین مولانا حسیب صدیقی نے کہاکہ رمضان ایک مقدس مہینہ ہے جس میں مسلمانوں کو اپنی زبان کی خاص طورپر حفاظت کرنی چاہئے اور زیادہ سے زیادہ لوگوں کی خدمت کرکے اپنے کو مستحق جنت بنانا چاہئے ۔ مولانا مزید کہاکہ ہمیں چاہئے کہ اگر ہمارے بڑے موجود ہیں تو ان کے ساتھ ہمدردانہ سلوک اور عزت و احترام کا معاملہ کرنا چاہئے ، جس میں کسی قسم کی کوئی کمی نہیں ہونی چاہئے ۔ انہوں نے کہاکہ مسلمان اس ماہ میں نماز روزہ اور اگر مستحق ہوں تو زکوٰۃ وغیرہ کی ادائیگی کا شرعی نقطہ نظر سے اہتمام کریں ، نیز صحیح و سالم ہونے کی بناء پر ایک بھی روزہ فوت نہ کریں ورنہ فوت شدہ روزہ کی ادائیگی اگر کوئی عمر روزہ رکھ کر کرے تو ا س کی تلافی ممکن نہیں ۔

 

ماہنامہ ترجمان دیوبندی کے مدیر اعلیٰ و ممتاز قلمکار مولانا ندیم الواجدی نے کہاکہ رمضان تذکریہ نفس اور تطہیر باطن کا عنوان ہے اسلئے کہ رمضان ایک بندہ خداکے ظاہر کو بھی سنوارتا ہے اور اس کے قلب و روح کو بھی پاکیزگی اور نظافت سے نوازتا ہے ، لہٰذا مسلمانوں کو چاہئے کہ اس ماہ مبارک کو اس کے تقاضہ او رتقدس کے ساتھ گذارنے کا اہتمام کریں کیونکہ یہی ایک بندہ خداکا منصب اصلی ہے ۔
جمعیۃ علماء ہند کے صوبائی جنرل سکریٹری مولانا سیدمحمد مدنی نے روزہ کی عظمت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ روزہ ایک اہم ترین عبادت اور خالق و مخلوق کے مقدس رشتوں کو مستحکم کرنے کا ایک ایسا وسیلہ ہے جس سے بندہ اپنے آقا کی بندگی اور غلامی کی اظہار کرنے کے ساتھ ہی خدائی قربت اور نزدیکیوں کو حاصل کرتا ہے اور انعامات ربانی سے بہرہ ور ہوتا رہتا ہے ، تاہم مسلمانوں کو چاہئے کہ اس مہینہ میں زیادہ سے زیادہ عبادت کا اہتمام کریں ۔
دارالعلوم وقف دیوبند کے استاذ حدیث وممتازقلمکار مولانا نسیم اختر شاہ قیصر نے رمضان المبار کی آمد کو مسلمانوں کے لئے فلاح و کامرانی او رخداد اد نعمتوں کا مہینہ قرار دیا اور کہاکہ بندہ مومن کو چاہئے کہ اس ماہ مبارک کی عظمت اور اس کے تقدس کی قدو قیمت کو پہچانیں اور اپنے تمام تر اوقات عبادت گذاری اور خدا تعالیٰ کی خوشنودی حاصل کرنے کے لئے صرف کرے ۔ انہوں نے رمضان کے ماہ مبارک کو فرزندان اسلام کے لئے اللہ کی رضاء جوئی حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ قرار دیا ۔

 

جامعہ رحمت گھگرولی کے روح رواں اور ملی کونسل کے ضلع صدر مولانا ڈاکٹر عبدالمالک مغیثی نے رمضان کا مبارک و مسعود مہینہ کو مسلمانوں کے لئے عبادت گذاری، نیزنیکیوں کا موسم بہار قرار دیا اور کہاکہ اللہ کے نیک بندوں کو پورے سال اس ماہ مقدس کا انتظار رہتا ہے اور جب یہ مہینہ انہیں مل جاتا ہے تو وہ اس کو پاکر اس قدر خوش ہوتے ہیں جیسے انہیں کوئی متاع گمشدہ حاص ہوگئی ہو ۔ انہوں نے فرزندان توحید سے اس متبرک مہینہ میں روزہ ، تراویح ، تلاوت و اذکار پر زرو دیتے ہوئے کہاکہ مذکورہ امو ر کو نہایت اہتمام کے ساتھ ادا کرنا چاہئے ۔ مولانا موصوف نے کہاکہ خوش نصیب ہیں وہ لوگ جو اس مہینہ کی فضیلتوں اور برکتوں سے اپنے دل کا دامن بھر لیتے ہیں اور بڑے بد نصیب ہیں وہ لوگ جو یہ مہینہ پاکر خدائی نعمتوں محروم رہ جاتے ہیں ۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *