چوتھی دنیاگروپ کا عظیم الشان افطارمنعقد

Chauthi-Duniya-iftar-guests
نئی دہلی،25مئی:’’چوتھی دنیاگروپ کے زیراہتمام افطاروڈینرکی تقریب ہرسال کی طرح اس بار بھی فرقہ وارانہ ہم آہنگی اوربھائی چارگی کا پیغام لے کرآئی اوروہ بھی ایک ایسے وقت جب کہ ملک کے موجودہ ماحول میں اس کی شدیدضرورت ہے۔‘‘گذشتہ دن قومی راجدھانی کے کانسٹی ٹیوشن کلب میں منعقد افطاروڈینرپروگرام میں تقریباً ایک ہزارشرکاء کا یہ عام احساس تھا۔
سماج کے مختلف طبقات اورملت کے متعدد مکاتب فکرکی نمائندگی والی اس محفل میں سابق نائب صدر محمدحامد انصاری ، سابق وزیراعلیٰ جموں وکشمیر فاروق عبداللہ ،سابق مرکزی وزیراورلال بہادرشاستری کے بیٹے انل کے شاستری، سابق چیف الیکشن کمشنر ایس وائی قریشی، جنتادل یونائٹڈ کے چیف سکریٹری جنرل کے سی تیاگی ، حکومت ہندکے وزیراوپیندرکشواہا، ارکان پارلیمنٹ اسلم شیرخاں اورسنجے سنگھ نیزبہارکے وزیرزراعت پریم سنگھ، سپریم کورٹ کے سابق جسٹس مارکنڈے کاٹجو، ، بزرگ شاعر گلزاردہلوی ،مولانا آزادنیشنل اردویونیورسٹی کے پرووائس چانسلر خواجہ ایم شاہد اورجامعہ ملیہ اسلامیہ کے سابق وائس چانسلرشاہدمہدی کے علاوہ امیرجماعت اسلامی ہند مولانا سیدجلال الدین عمری، نائب امیرنصرت علی، سکریٹری جنرل انجینئرمحمدسلیم، سکریٹری محمداحمد، صدرآل انڈیامجلس مشاورت نوید حامد، جنرل سکریٹری مولانا عبدالحمیدنعمانی، سکریٹری جمعےۃ علماء ہند عظیم اللہ، مرکزی جمعیت اہل حدیث ہندکے نمائندے شیخ اظہرمدنی،شیعہ عالم دین مولانا کلب رُشید،صدرویلفیئرپارٹی آف انڈیا ڈاکٹرقاسم رسول الیاس ، صدرپالٹیکل کاؤنسل آف انڈیا ڈاکٹرتسلیم رحمانی،درگارقطب الدین بختیارکاکوی مہرولی کے فوزان احمدصدیقی، سابق چےئرمین دہلی حج کمیٹی ڈاکٹر محمدپرویزمیاں ، دہلی کینسرریسرچ انسٹی ٹیوٹ اینڈ ہاسپیٹل کے ڈائریکٹرایڈمنسٹریشن عبدالمنان،مشہورافسانہ نگار اوشامہاجن، میڈیاسیلی بریٹیز نلنی سنگھ اورقمروحید نقوی،منصف ٹی وی کے سی ای اوکبیرصدیقی، پریس کلب آف انڈیا کے صدر گوتم لاہری ،سکریٹری جنرل ونئے کمار اورجامعہ ملیہ اسلامیہ کے پروفیسر عبدالقیوم انصاری، سہ روزہ دعوت کے چیف ایڈیٹرپروازرحمانی، اخبارمشرق کے چیف ایڈیٹروسیم الحق اورایگزیکٹیوایڈیٹرحناتنویر، انگریزی صحافی واینکررعنا صدیقی زماں، اورصحافی ومصنفہ منیشابھلّہ،دی وائراردوویب سائٹ کے ایگزیکٹیوایڈیٹرمحمدمہتاب عالم اوراے بی پی کے مشہورکرائم شو’سنسنی‘ کے اینکرشری وردھن ترویدی ،راجستھان ہائی کورٹ کے مشہوروکیل اصغرعلی اورپدم شری جے ایس راجپوت خاص طورسے شریک تھے۔
Chauthi-Duniya-iftar-guests
اس عظیم الشان افطارتقریب میں پاکستان کے ہندوستان میں ہائی کمشنرسہیل محمود نے اظہارخیال کرتے ہوئے کہاکہ چوتھی دنیا کے ذریعہ ہرسال منعقد کئے جارہے اجتماعی افطار کے اس طرح کے پروگراموں کی شدیدضرورت ہے تاکہ ہم آہنگی اوراخوت کا فروغ ہو۔انہو ں نے مزیدکہاکہ ہم لوگ اپنے پڑوسی ملک میں جس طرح کا ماحول دیکھناچاہتے ہیں وہ چوتھی دنیاکی اس مثالی تقریب میں آکردیکھنے کوملا۔ انہو ں نے چوتھی دنیاکے میرکاروں کمل مرارکااورچیف ایڈیٹر سنتوش بھارتیہ کی اس اہم کام کوہرسال انجام دینے کیلئے پذیرائی کی۔ نائیجریاکے ڈپٹی ہیڈ آف مشن اسماعیل علاتیزے نے کہاکہ چوتھی دنیاکے اجتماعی افطارکی دنیاکے دوسرے ملکوں میں بھی تقلیدضروری ہے تاکہ مختلف فرقوں کے درمیان ہم آہنگی پیداہو۔ برکینافاسوکے فرسٹ کاؤنسلراماداؤتراؤرے نے کہاکہ انہیں ہندوستان کی اس مثالی یکجہتی اورہم آہنگی نے بے حدمتاثر کیا جس میں مختلف مذہبی کمیونٹیوں اورمکاتب فکر کے افراد ایک جگہ افطار کی تقریب میں بڑے ہی جذبے سے شریک ہوتے ہیں۔سینگال کے کاؤنسلرپاپا اسانے مبینگو نے اپنی بیگم کے ساتھ اس میں شرکت کرتے ہوئے چوتھی دنیاگروپ کوجذباتی طورپرمبارکباد دی۔اس تقریب میں افغانستان کے سفارت خانہ میں اقتصادی کونسلراحمدشعیب حبیبی،گینیابساؤ کے قونصل کے اعزازی مشیرایم جے رحمان اورمتحدہ عرب امارات کے سفیرکے مشیرخاص اورمیڈیاکوآرڈی نیٹرعبدالواحد ودیگرسفارتکاروں نے بھی شرکت کی۔
دیگرشرکاء میں زندگی کے مختلف شعبہ حیات سے تعلق رکھنے والی شخصیات بڑی تعداد میں موجودتھیں۔ قومی راجدھانی میں چوتھی دنیاکی یہ تقریب گذشتہ9برسوں سے پابندی سے منعقد کی جاتی ہے اوریہ باشندگان دہلی ودیگرمقامات کی توجہ کامرکزبنی رہتی ہے۔
پروگرام کی نظامت ماہرنظامت اوروائس آف امریکہ کے انڈیامیں بیوروچیف سہیل انجم نے بحسن وخوبی انجام دیتے ہوئے کہاکہ یہ کریڈٹ چوتھی دنیاگروپ کوہی جاتاہے کہ اس نے قومی راجدھانی میں سب سے بڑے پیمانے پراس شاندارمحفل کاگذشتہ 9سے سلسلہ جاری رکھاہے۔اللہ اس عزم اورہمت کوبرقراررکھے تاکہ قومی ہم آہنگی ،اخوت ، رواداری اورتحمل کے جذبے کوفروغ ملے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *