سماج میں ہر سطح پر صنفی بیداری کی ضرورت:پروفیسر ثمینہ خان

Prof-Samina-Khan
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے شعبۂ انگریزی کی پروفیسر ثمینہ خان نے سنٹرل یونیورسٹی، ہریانہ میں صنفی بیداری مہم کے افتتاحی پروگرام میں بطور ریسورس پرسن شرکت کی ۔ پروگرام شعبۂ انگریزی کے ذریعہ منعقد کیا گیا تھا۔ پروفیسر ثمینہ خان نے اساتذہ، ریسرچ اسکالروں اور طلبہ سے اپنے خطاب میں سماج میں ہر سطح پر صنفی بیداری کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہاکہ صنفی انصاف کی بحث کو آگے بڑھانے، بجٹ میں خواتین کی معقول حصہ داری اور کمزور طبقات کی خواتین کو سماج کی اصل دھارا میں لانے میں تعلیمی اداروں کا اہم رول ہے۔
اساتذہ و طلبہ کے ساتھ ایک دوسرے سیشن میں پروفیسر ثمینہ خان نے کہا کہ یہ افسوس کی بات ہے کہ آزادی کو 70برس گزرجانے کے باوجود ہندستان میں خواتین کی سبھی تحریکیں مساوات، آزادی اور عزت و وقار کے بنیادی دستوری تحفظات کو نافذ کرنے کے لئے جدوجہد کررہی ہیں۔ خواتین کے خلاف تشدد کے حالیہ واقعات کا حوالہ دیتے ہوئے پروفیسر خان نے کہاکہ سزا کو سخت کرنے اور نئے قوانین بنانے سے خواتین کے خلاف جرائم کم نہیں ہوں گے ، بلکہ ہمیں ایک ایسا نظام بنانا ہوگا جس میں مجرم سزا سے بچنے نہ پائے اور وہ کیفر کردار تک پہونچے۔
انھوں نے مزید کہاکہ اکیسویں صدی میں اب خواتین کو خاموش رہنے کی عادت ترک کرنی ہوگی ، انھیں اپنے خلاف ظلم و زیادتی پر آواز بلند کرنے کی عادت ڈالنی ہوگی اور کنبے، اداروں اور سماج کو اس بات کا احساس کرنا ہوگا کہ وہ صنفی امتیاز کے بغیر خواتین کو مواقع فراہم کریں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *