کمارسوامی کا بی جے پی پرسنگین الزام

kumaraswamy
کرناٹک میں اسمبلی انتخابات کے نتائج کے بعدسیاسی سرگرمیاں کافی تیزہوگئی ہے۔ سبھی پارٹیاں حکومت سازی کی کوششوں میں مصروف ہیں اور اپنی اپنی حکومت بنانے کا دعوی کررہی ہیں۔ اسیتعلق سے آج جے ڈی ایس ممبران اسمبلی کی میٹنگ ہوئی ، جس میں ایچ ڈی کمار سوامی کو ایوان کا لیڈر منتخب کیا گیا۔اس کے بعدانہو ں نے بی جے پی پرسنگین الزام لگائے ہیں۔کمار سوامی نے بی جے پر الزام لگایا کہ جے ڈی ایس کے ممبران اسمبلی کو خریدنے کیلئے انہیں 100۔100 کروڑ روپے تک کا آفر کیا گیا۔انہو ں نے کہاکہ بی جے پی نے میری پارٹی کے لوگوں کوسوکروڑروپے نقد اورکابینہ عہدہ دینے وعدہ کیاہے۔انہو ں نے کہاکہ ایساپہلی بارہواہے کہ جب کوئی پارٹی اپوزیشن کواس حدتک دھمکارہی ہے۔سوامی کے الزام سے لگتاہے کہ کرناٹک میں جوڑتوڑکی سیاست شروع ہوگئی ہے۔
کمارسوامی نے کہاکہ مجھے دونوں طرف سے آفرملاہے۔ میں ایسے ہی نہیں کہہ رہاہوں۔ میرے والدکے کریئرمیں کالادھبہ لگا کیونکہ 2004اور2005میں بی جے پی کے ساتھ چلاگیاتھا۔اب بھگوان نے مجھے اس کالے دھبے کومٹانے کاموقع دیاہے۔اسلئے میں کانگریس کے ساتھ جارہاہوں۔
میٹنگ کے بعد انہوں نے میڈیا سے بھی گفتگو کی۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے سیکولر ووٹوں کی تقسیم کرکے 104 سیٹیں حاصل کی ہیں ، اس کے ساتھ ہی انہوں نے وزیر اعظم مودی پر بھی نشانہ سادھا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے پاس مطلوبہ تعداد نہیں ہے ، ایسے میں وزیر اعظم مودی کو ایسا نہیں کہنا چاہئے تھا کہ بی جے پی حکومت بنائے گی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *