کرناٹک میں بی جے پی کی سرکارگری،فلورٹیسٹ سے پہلے ہی یدی یورپا نے استعفیٰ دیا

yd
کرناٹک اسمبلی میں بی ایس یدی یورپا نے سی ایم عہدہ سے استعفیٰ کا اعلان کردیاہے۔وہ اسمبلی میں اکثریت ثابت نہیں کرپائے اورفلورٹیسٹ سے پہلے ہی استعفیٰ کااعلان کردیاہے۔بی ایس یدی یورپا کرناٹک اسمبلی میں اکثریت نہیں ثابت کرپائے ۔اسلئے کرناٹک میں بی جے پی کی سرکارگرگئی ہے۔،یدی یورپا نے استعفیٰ دینے کا اعلان کردیاہے ۔اوراسمبلی سے سیدھے یدی یورپاراج بھون گورنرکواپنا استعفیٰ سونپنے کیلئے نکل گئے ہیں ۔بہربی جے پی کوآج زوردارجھٹکالگاہے ۔اب کرناٹک میں گٹھ بندھن کی سرکاربنے گی۔ کانگریس اورجے ڈی ایس کی سرکارہوگی اوروزیراعلیٰ کمارسوامی ہوں گے۔ےدی یورپانے آج ڈھائی دن کے بعد وزیراعلیٰ کے عہدہ سے استعفیٰ کا اعلان کیاہے۔
فلور ٹسٹ سے پہلے کرناٹک کے وزیراعلی یدی یورپا کے استعفی کے سبب جنوبی ہند کی کرناٹک ریاست میں بی جے پی کی حکومت گر گئی ۔ یدی یورپا اکثریت ثابت کرنے میں ناکام ہوگئے جس کے پیش نظر انہوں نے استعفی دے دیا۔
فلور ٹسٹ سے پہلے اسمبلی میں اپنی تقریر میں انہوں نے کہا کہ اگر عوام ان کی پارٹی کو 104کے بجائے 113نشستیں دیتے تو اس ریاست کو وہ جنت بنا دیتے ۔انہوں نے جذباتی انداز میں کنڑی زبان میں اپنی تقریر کے دوران کئی مرتبہ کانگریس پر نکتہ چینی کی۔ یورپا نے کہا کہ وہ اپنی آخری سانس تک لڑتے رہیں گے۔
یدی یورپا نے کہا کہ انہوں نے دو سال تک ریاست کا دورہ کیا تھا اور لوگوں کے چہروں پر ددر کو محسوس کیا تھا ۔ وہ لوگوں سے ملی محبت اور اخوت کو فراموش نہیں کرسکتے ۔انہوں نے کہا کہ عوام نے بی جے پی کو 104نشستیں دی ہیں۔ رائے عامہ کانگریس اور جے ڈی ایس کے حق میں نہیں دیا گیا ۔
انتخابی نتائج کے بعد لمبے سیاسی ناٹک پرآج کرناٹک میں بریک لگ گیا۔اکثریت ثابت کرنے کے بجائے وزیراعلیٰ بی ایس یدی یورپا نے استعفیٰ دیا، اسی کے ساتھ بی جے پی کی سرکاردودنوں میں ہی گرگئی۔ اس کے ساتھ ہی صاف ہوگیاہے کہ انتخابات میں تیسرے نمبرپررہی جے ڈی ایس کے کمارسوامی کانگریس کے حمایت سے وزیراعلیٰ بنیں گے۔ استعفیٰ سے پہلے بی ایس یدی یورپا نے جذباتی تقریرکی ۔ یدیورپا نے کہاکہ کانگریس-جے ڈی ایس نے عوام کے ساتھ دھوکہ کیا، انتخاب میں دوسرے کے خلاف پرچارکیا اوربعدمیں ایک دوسرے کے ساتھ آگئے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *