ملک میں سخت گرمی کا قہر، لوگوں کا برا حال

file-photo
file-photo
اس وقت پورے ملک میں شدت کی گرمی پڑ رہی ہے ۔شمالی ہند خاص طور سے شدید گرم لہروں کی زدمیں ہے جس سے لوگ بے حال ہیں۔صبح سے ہی تیز دھوپ اور گرمی سے روز مرہ کے معمول کے کم ٹھپ پڑے ہوئے ہیں گرم ہوائیں شروع ہو جاتی ہیں جس سے بازاروں میں دکانوں پر سناٹا رہتا ہے ۔ پنجاب سے لے کر راجستھان اور دہلی سمیت متعدد ریاستوں میں پارہ لگاتار چڑھ رہا ہے اور لو نے حالت خراب کر دی ہے۔شمالی ہندوستان کی کئی ریاستوں میں پارہ 45 ڈگری سلسیس کے آس پاس ہے اور محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ اگلے تقریباً ایک ہفتہ تک اس سے راحت ملنے کی امید نہیں ہے اور آنے والے دنوں میں پارہ اور چڑھے گا۔قومی راجدھانی میں ہفتہ کو درجہ حرارت 45ڈگری پہنچ گیا جو اس سال سب سے زیادہ ہے۔ محکمہ موسمیات کے ایک افسر کے مطابق اگلے دو دن تک لْو سے نجات ملنے کا کوئی امکان نہیں ہے۔ آج کا درجہ حرارت پچھلے تین سال میں سب سے زیادہ تھا۔ اْدھر اگلے چوبیس گھنٹوں میں جنوب مغربی مانسون کے جنوبی بحیرہ عرب، جنوبی خلیج بنگال، انڈمان سمندر اور انڈمان اور نیکوبار کے کچھ علاقوں کی طرف بڑھنے کے لیے حالات سازگار ہیں۔

 

پڑھیں   شادی کے 20سال بعدبیوی میہرسے الگ ہوئے ارجن رامپال

 

محکمہ موسمیات کے مطابق بدھ کو راجستھان کا بوندی لگاتار دوسرے دن بھی 48 ڈگری کے ساتھ ملک کا سب سے گرم شہر رہا۔ وہیں، ملک میں سب سے ٹھنڈا جموں و کشمیر لیہ (4.7 ڈگری) رہا۔ راجدھانی میں دن کا درجہ حرارت 45.2 اور ممبئی میں 24 ڈگری سیلسیس درج کیا گیا۔ دہلی سمیت 4 ریاستوں میں پارہ 44 کے اوپر پہنچ گیا ہے۔ چنڈی گڑھ کا زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 42.20 رہا جو معمول سے 4 ڈگری زیادہ ہے۔ وہیں حصار 45.1 ڈگری کے ساتھ اس علاقہ کا سب سے گرم شہر رہا۔
محکمہ موسمیات کے مطابق دہلی میں بڑھتے درجہ حرارت کے چلتے ہیٹ ویو کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔ پچھلے تین دنوں سے زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت تین سے چار ڈگری سیلسیس زیادہ رہا۔ دہلی میں 3 دنوں سے 20 سے 30 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گرم ہوائیں بھی چل رہی ہیں۔ باہری دہلی سے لے کر جنوبی دہلی، اشوک وہار، پالم، مغربی دہلی سمیت کئی علاقوں کے اسپتالوں میں بدن میں پانی کی کمی اور سر درد جیسی شکایات کے ساتھ مریض پہنچ رہے ہیں۔ دہلی میں 27 سے 29 مئی کے درمیان ہیٹ ویو چلنے کا انتباہ جاری کیا گیا ہے۔راجستھان میں شدید گرم لہر کی صورتحال برقرار ہے۔ چورو میں ہفتہ کو سب سے زیادہ 45اعشاریہ 5 ڈگری سیلسیس درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا تھا۔ سری گنگا نگر میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 46اعشاریہ6 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق گرمی کی شدت کی صورتحال اگلے 24گھنٹے میں بھی اسی طرح برقرار رہے گی۔
دریں اثنا ہماچل پردیش میں لْو کا قہر تیسرے دن بھی جاری رہا۔ اونا میں ان گرمیوں میں موسم کے دن کا سب سے زیادہ درجہ حرارت چوالیس اعشاریہ دو ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ شملہ کے محکمہ موسمیات نے اگلے چوبیس گھنٹے کے لیے خشک موسم اور لْو جاری رہنے کی پیش گوئی کی ہے۔ مغربی راجستھان، مدھیہ پردیش اور ودربھا کے کچھ حصوں میں بھی لْو کا اثر ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *