کشمیرکی ’آزادی ‘مانگنے والے نوجوانوں کوبپن راوت کی وارننگ

bipin-rawat
کشمیرکے وہ نوجوان جنہو ں نے ہتھیاراٹھانے اورپتھربازی کواپنا پیشہ بنالیاہے، انہیں انڈین آرمی چیف بپن راوت نے سخت الفاظ میں پیغام دیاہے۔بپن راوت نے کہاہے کہ نوجوان ہندوستانی فوج سے نہیں لڑسکتے ہیں اورانہیں آزادی نہیں مل سکتی ہے۔انگریزی روزنامہ انڈین ایکسپریس کو انٹرویو دیتے ہوئے جنرل راوت نے کشمیری نوجوانوں سے کہاکہ اگرانہیں لگتاہے کہ ہم ان کے لئے لڑیں گے جوالگ ہوکرآزادی حاصل کرنا چاہتے ہیں توایساہرگزکبھی نہیں ہوگا۔راوت نے کہا ،کہ میں کشمیری نو جوانوں کو بتانا چاہتا ہوں کہ آزادی ممکن نہیں ہے۔یہ نہیں ملے گی،بیکارکی باتوں میں نہ آئیں۔آپ ہتھیار کیوں اٹھا رہے ہیں؟ ہم آزادی چاہنے والوں سے ہمیشہ لڑائی لڑیں گے ۔آزادی نہیں ملنے والی ہے، کبھی نہیں۔بپن راوت نے تشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہاکہ وہ ان نوجوانوں کو لیکر فکرمند ہیں،جو راستہ بھٹک گئے ہیں اور ‘آزادی لینے کیلئے ہتھیار اٹھا رہے ہیں۔
جنرل راوت نے کہاکہ فوج کے ذریعہ کتنے دہشت گرد مارے گئے وہ ان اعدادوشمار کوبہت زیادہ توجہ نہیں دیتے ۔انہو ں نے کہاکہ میرے لئے یہ اعدادو شمار معنی نہیں رکھتے کیونکہ میں جانتاہوں کہ یہ عمل چلتا رہے گا۔جنرل راوت نے کہاکہ وہ ہتھیاروں سے پریشان ہوتے ہیں ۔انہو ں نے کہاکہ ہمیں اس میں مزہ نہیں آتا۔ لیکن آپ ہم سے لڑیں گے توہم اپنی پوری طاقت سے لڑیں گے۔کشمیریوں کویہ بات سمجھنی چاہئے کہ سیکوریٹی اہلکاراتنے جارحانہ ہیں ہیں۔آپ سیریا اورپاکستان کودیکھیں۔وہاں ایسے حالات میں ٹینکوں اورہوائی طاقت کااستعمال کیاجاتاہے ۔تمام اکساوے کے باوجود ہمارے فوج پوری کوشش کرتے ہیں کہ کسی شہرکوکسی طرح کا کوئی نقصان نہ ہو۔انہو ں نے کہاکہ میں جانتاہوں کہ نوجوان غصے میں ہیں، لیکن فوجوں پرحملہ کرنا ،ہم پرپتھرپھینکنا کوئی راستہ نہیں ہے۔
ہندوستانی فوج سربراہ مزیدکہاکہ وہ اس بات کوسمجھتے ہیں کہ کشمیرمسئلے کا فوج حل نہیں ہوسکتا۔انہو ں نے کہاکہ سیاسی جانکاروں، سیاسی جماعتوں کے نمائندوں کوگاؤں میں ، خاص کرجنوبی کشمیرمیں جاکرلوگوں سے بات کرنی چاہئے۔انہوں نے کہا کہ دہشت گرد تنظیم سے لوگ مسلسل جڑ رہے ہیں۔میں اس بات پر زور دینا چاہتا ہوں کہ یہ سب بیکار ہے۔انہیں کچھ حاصل نہیں ہوگا۔آپ فوج سے نہیں لڑ سکتے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *