امریکہ نے شام کے تین مقامات پر کئے میزائل حملے

missile
شام میں 7اپریل کوبے گناہ لوگوں پرکئے گئے کیمیکل حملے کے جواب میں امریکہ نے شام پر جمعہ دیررات میزائلوں سے حملہ کیا۔اس میں برانس اوربرطانیہ نے اس کا ساتھ دیا۔امریکی دفاعی محکمہ پینٹاگن کے مطابق، دمشق اورحمص میں سوزائدمیزائلیں داغی گئیں۔شام کے سرکاری ٹی وی چینل نے دعویٰ کیاہے کہ اس نے ان میں سے 13کومارگرایا۔اس کارروائی میں فرانس اوربرطانیہ نے اس کا ساتھ دیا۔امریکی صدرڈونالڈٹرمپ نے کہاکہ یہ شیطان کی انسانیت کے خلاف کی گئی کارروائی کا جواب ہے۔وہیں روس نے اسے صدرولادیمیرپوتن کی توہین اورٹرمپ کوموجودہ دورکا ہٹلربتایا۔اس کا کہناہے کہ وہ اسے برداشت نہیں کرے گا۔
شام کی سرکاری خبرایجنسی کا کہنا ہے کہ شامی فضائیہ امریکہ، برطانیہ اور فرانس کے حملہ کا جواب دے رہی ہے۔عینی شاہدین کے مطابق دمشق میں یکے بعد دیگر ے کئی دھماکے سنے گئے اور دھواں اٹھتے بھی دیکھا گیا ہے۔صدر ٹرمپ نے ایران اور روس کو شام سے تعلقات پر انتباہ کیا، ان کا کہنا تھا کہ کیمیائی حملوں پرشامی حکومت اوراس کے روسی اور ایرانی اتحادیوں کا احتساب کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بشارا الاسد کے مستقبل کا فیصلہ شام کے عوام کے ہاتھوں میں ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *