جے این یو:’لوجہاد‘پربنی فلم کی اسکریننگ کے دوران طلباکے دوگروپوں میں جھڑپ،طلبازخمی

JNU
قومی راجدھانی دہلی میں واقع جواہرلال نہرویونیورسٹی (جے این یو) میں ایک بارپھرتنازعہ ہوگیاہے۔ خبروں کے مطابق، یہاں پرجمعہ کی دیرشب’لوجہاد‘پرمبنی ایک فلم کی اسکریننگ پرجم کرہنگامہ ہوا۔اتناہی نہیں دوجماعتوں میں فلم کی اسکریننگ کے وقت ہاتھاپائی کے ساتھ ساتھ کافی توڑپھوڑہوئی ہے۔پولس کے مطابق، زخمیوں کوعلاج کیلئے بھیجاگیاہے۔ وہیں دونوں جماعتوں کی جانب سے ملی شکایتوں کے تحت جانچ کی جارہی ہے۔
بتایاجارہاہے کہ گلوبل انڈین فاؤنڈیشن اورجے این یوکے وویکانند وچارمنچ کے ذریعہ ’ان دی نیم آف لوجہاد‘ نامی فلم کی اسکریننگ کی جارہی تھی ، جس پردوجماعتوں کے طلبا آپس میں بھڑگئے۔اس فلم میں کیرل میں لوجہادکے نام پرہندولڑکیوں کے مذہب تبدیلی کا مسئلہ اٹھایاگیاہے۔اسکریننگ کی مخالفت میں جے این یو اسٹوڈنٹ یونین اورلیفٹ ونگ کے طلبا یہاں مظاہرہ کررہے تھے، لیکن تبھی رائٹ ونگ اورلیفٹ ونگ کے لوگ آپس میں بھڑگئے۔طلباکے بیچ جم کرمارپیٹ ہوئی ہے اورکئی طلباوطالبات زخمی بھی ہوئے ہیں۔ دونوں گروپوں نے ایک دوسرے پرطالبات کے ساتھ بدسلوکی کاالزام بھی لگایاہے۔بتایاجارہاہے کہ جے این یوکیمپس کے گیٹ پرپولس کی تعیناتی کی گئی ہے، لیکن یونیورسٹی انتظامیہ نے پولس کوکیمپس کے اندر گھسنے کی اجازت نہیں دی ۔ لیفٹ ونگ اور اے بی وی پی کے طلبانے وسنت کنج پولس اسٹیشن پرجاکراس معاملے میں ایک دوسرے جماعت کے طلباکے خلاف شکایت درج کرائی ہے۔
فلم کی اسکریننگ انعقادکرنے والوں کا کہناہے کہ جے این یومیں ہورہے مذہب تبدیلی کوروکنے کے مقصدسے کیمپس کے اندر یہ فلم دکھائی جارہی تھی۔ لیکن اسکریننگ شروع ہونے سے پہلے ہی جے این یوکی لیفٹ ونگ نے فلم کے خلاف مظاہرہ شروع کردیا۔بینراورپوسٹروں کے ذریعہ بی جے پی اورآر ایس ایس کے خلاف نعرے بازی کی گئی۔

 

یہ بھی دیکھیں  اقلیتی اداروں کے تعلق سے سپریم کورٹ کا فیصلہ
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *