آصفہ آبروریزی وقتل معاملہ:اگلی سماعت 28اپریل کو

kathua
جموں:کٹھوعہ آبروریزی اور قتل معاملے میںآج نابالغ سمیت 8ملزموں کوآج یہاں کی ایک عدالت میں سنوائی کیلئے پیش کیاگیا۔کورٹ اب اس معاملے میں اگلی سنوائی 28اپریل کوکرے گا۔وہیں اس معاملے میں متاثرہ کی وکیل دپیکاسنگھ راجاوت نے اپنے ساتھ ریپ یاقتل کرائے جانے کا خدشہ کااظہارکیاہے۔انہوں نے کیس کوجموں وکشمیر سے باہر ٹرانسفرکرانے کا مطالبہ کیاہے۔اس معاملے میں متاثرہ کے اہل خانہ نے آج سپریم کورٹ میں عرضی داخل کی ہے۔سپریم کورٹ متاثرہ کے اہل خانہ کی عرضی پرسنوائی کرے گا۔
عیاں رہے کہ اس معاملے میں 8 لوگوں کو ملزم بنایا گیا ہے۔ملزموں میں ایک نابالغ بھی شامل ہے۔ کیس کے ملزم ہیں سانجھی رام،دیپک کھجوریا،سریندر ورما،وشال جنگوترا،تلک راج،آنند دتہ اور پرویش کمار،۔انہیں ضلع اور سیشن کورٹ کے سامنے پیش کیا گیا۔
جموں۔کشمیر پولیس کی کرائم برانچ نے پیر کو چیف جسٹس مجسٹریٹ کی عدالت میں 15 صفحات کی چارج شیٹ داخل کی ہے۔اس میں بکروال کمیونٹی کی بچی کے اغوا ،ریپ،اور اس کے قتل کو لیکر رونگٹے کھڑے کر دینے والے خلاصے ہوئے ہیں۔الزام ہے کہ 8 سال کی معصوم بچی آصفہ کو جنوری میں ایک ہفتے تک کٹھوعہ ضلع کے ایک گاؤں کے مندر میں یرغمال بناکر رکھا گیاتھا اور اسے نشیلی اشیا دیکر اس کے ساتھ بار۔بار ریپ کیا گیا اور بعد میں اس کا قتل کر دیا گیا تھا۔کشمیر کے کٹھوعہ ضلع میں 8 سال کی بچی کے ساتھ اجتماعی عصمت دری اور قتل کے معاملے کو لیکر ملک بھر میں غصہ ہے۔

 

یہ بھی پڑھیں   مکہ مسجدبم بلاسٹ:آج آئے گافیصلہ
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *