ہندوستان اورفرانس کے درمیان بہت بہتر تال میل :صدرمیکرون

pm-modi-Macron
فرانس کے صدر ایمینوئل میکرو ن چاردن کے دورے پرہندوستان میں ہیں۔اس دوران انہوں نے پی ایم مودی سے مل کرمختلف شعبوں میں 14اہم سمجھوتے کئے ۔یہ سمجھوتے ریلوے، شہری ترقی ، دفاع اورسیکوریٹی ودیگرشعبوں میں کئے گئے ۔اس سے قبل فرانس کے صدر ایمینوئل میکرو ن نے دہلی اورفرانس کے تعلقات کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کے دورہ سے دونوں ممالک کے درمیان خاص کر، دفاع اور سیکورٹی کے شعبوں میں باہمی تال میل کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔ انہوں نے دونوں ممالک کے تعلقات کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا’’میں سمجھتا ہوں کہ ہمارے درمیان بہت بہتر تال میل ہے۔ دو عظیم جمہوری ممالک کے درمیان تعلقات تاریخی ہیں‘‘۔ اس سے قبل صدر رام ناتھ کووند اور وزیر اعظم نریندر مودی نے مسٹر میکرون اور ان کی اہلیہ بریگت میری کلاؤڈ میکرون کا راشٹر پتی بھون میں استقبال کیا۔ میکرون کے ساتھ ان کی کابینہ کے سینئر ارکان بھی آئے ہوئے ہیں۔ وزیر اعظم مودی نے مسٹر میکرون کا ہوائی اڈے پر استقبال کیا۔ مسٹر میکرون چار روزہ دورے پر کل دیر رات یہاں پہنچے۔ مودی پروٹوکول توڑ کران کا استقبال کرنے کے لئے خود ہوائی اڈہ پہنچے۔
میکرون نے راشٹر پتی بھون میں روایتی استقبالیہ تقریب کے دوران کہا’’میں ہندوستان آ کر بہت خوش ہوں اور خود کو نازاں محسوس کر رہا ہوں۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے گزشتہ سال جولائی میں اپنے فرانس دورے کے دوران مجھے اپنے ملک آنے کی دعوت دی تھی۔ میرا ارادہ دونوں ممالک کے درمیان خاص کر، دفاعی اور سیکورٹی کے شعبوں میں شراکت کا ایک نئے دور کا آغاز کرنے کا ہے۔فرانسیسی صدر اپنے دورہ کے دوران یہاں دو روزہ شمسی توانائی کانفرنس میں حصہ لیں گے۔ یہ کانفرنس 10 سے 11 مارچ تک راجدھانی دہلی میں ہوگی۔
تقریب کے بعد میکرون نے نامہ نگاروں سے بات چیت میں کہا کہ بھارت اور فرانس دونوں عظیم جمہوریتیں ہے اور دونوں کے تاریخی روابط ہیں۔ اس موقع پر صدر جمہوریہ ہند رام ناتھ کووند اور وزیر اعظم نریندر مودی کے علاوہ مرکزی وزیر پرکاش جاویڈیکر ، نرملا سیتا رمن، مہیش شرما، ہردیب سنگھ پوری، سشماسوراج اور دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل کے علاوہ دیگر معزز مہمانان موجودرہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *