ملک کو اپنی حالت پر چھوڑ دیجئے

پنجاب نیشنل بینک کے معاملے سے ملک ابھی ابھر ہی رہا ہے کہ اسی بیچ نئی باتیں آگئی ہیں۔ ایک تو جان بوجھ کر دہلی سرکار کے ساتھ کنٹراڈیکشن کروایا جارہا ہے۔ کانگریس اور بی جے پی بری طرح ہاری تھی، 70 میں سے 67 سیٹیں آپ کو ملی تھیں۔ اس جھٹکے سے بی جے پی ابھی تک ابھر نہیں پائی ہے ۔کھیل میں تو ہارنا و جیتنا لگا رہتا ہے لیکن ابھی جو بی جے پی کی قیادت ہے ،وہ ہار سمجھتی نہیں ہے۔ وہ ہار گئی ،تو گھونسا مارنے لگ جائے گی، چاقو چلانے لگ جائے گی۔ کسی بھی طریقے سے ان کو جیتنا ہے۔یہ جمہوری طریقہ نہیں ہے۔
کجریوال کون ہیں،کیاہیں، مجھے اس سے مطلب نہیں ہے۔ وہ الیکشن جیتے ہیں اور اچھی اکثریت سے جیتے ہیں۔ آپ ان کو کام کرنے دیجئے۔ ایک ضلع کا سابق پولیس کمشنر تھا بخشی۔ میری جانکاری میں کوئی بھی آئی پی ایس آفیسر اتنا غیر ذمہ دار، اتنا گھمنڈی، اتنا غیر جمہوری اور غیر آئینی نہیں تھا ۔ وہ کھلے عام چیف منسٹر کو کہہ دیتا تھا کہ میں ان کے ساتھ ڈیبیٹ کرنے کو تیار ہوں۔ آپ ہیں کون؟آپ چوکیدار ہیں۔آپ کا جو کام ہے، آپ کیجئے۔ آپ ایل جی کے انڈر میں ہیں،ان کو رپورٹ کیجئے۔ منتخب چیف منسٹر سے مت لڑیئے ۔ یہ جمہوری طریقہ نہیں ہے۔ جس ملک میں یہ ہو اہے، اس ملک میں پبلک ریووشن کرتی ہے۔ آپ کس خطرے سے کھیل رہے ہیں؟بخشی سے جان چھوٹی ،پھر نیا کمشنر آگیا ۔اس نے سب ٹھیک کردیا ۔اس نے ایک بھی ناگوار بیان نہیں دیا۔ سب ٹھیک ہو گیا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *