7روزہ سرمائی دیہی کیمپ کا اختتام

Proctor-Prof-M-Mohsin-Khan
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے سوشل ورک شعبہ کی جانب سے حکومت ہند کے ’اُنّت بھارت ابھیان‘ کے تحت یونیورسٹی کے ذریعہ گود لئے گئے گاؤں مرزا پور میں منعقد سات روزہ سرمائی دیہی کیمپ کا اختتام گزشتہ دنوں ہوا۔ اختتامی پروگرام میں موجود مہمانوں اور حاضرین کا خیرمقدم صدر شعبہ ڈاکٹر نسیم احمد خاں نے کیا۔ اس دوران طلبہ نے سات دنوں میں منعقد کئے گئے الگ الگ پروگراموں کی معلومات فراہم کی۔ طلبہ نے پوسٹر بنائے اور نُکّڑ ناٹک پیش کیا۔ اے ایم یو کے پراکٹر پروفیسر محسن خاں نے پروگرام کی ستائش کرتے ہوئے کہاکہ ڈرامے کے ذریعہ طلبہ نے حکومت ہند کے ذریعہ چلائے جارہے منصوبوں جیسے کہ سوچھ بھارت ابھیان، بیت الخلاء کی تعمیر اور دیہی ترقی کا جو پیغام دیا ہے وہ قابل تعریف ہے ، اس طرح کے پروگرام آئندہ بھی منعقد ہوتے رہیں تاکہ دیہی عوام میں بیداری پیدا ہو۔

 

یہ بھی پڑھیں  وسیم رضوی نے مسلم پرسنل لاء بورڈ پرحملہ بولا

 

پروگرام کے مہمان خصوصی اور تعلیم بالغاں و مسلسل تعلیم و توسیع مرکز کے ڈائرکٹر پروفیسر گلریز خاں نے کہاکہ صدر شعبہ ڈاکٹر نسیم احمد خاں کی رہنمائی میں سوشل ورک شعبہ لگاتار ترقی کی نئی عبارت لکھ رہا ہے۔ پروگرام کے مہمان اعزازی اور شعبۂ عمرانیات کے پروفیسر عبدالمتین نے دیہی علاقوں میں ڈیجٹلائزیشن کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔ آخر میں ڈاکٹر نسیم احمد خاں نے ’اُنّت بھارت ابھیان‘ کے تحت شعبہ کے ذریعہ گود لئے گئے گاؤوں میں انجام دی جانے والی مختلف سرگرمیوں کے بارے میں بتایا۔ پروگرام میں سماجی خدمتگار مسٹر شمس الخان کا خاص تعاون شامل رہا۔ انھوں نے سوشل ورک شعبہ کے ذریعہ کئے جانے والے کاموں کو سراہا۔ پروگرام کی نظامت سوشل ورک شعبہ کے اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر محمد عارف نے کی۔ شعبہ کی اسسٹنٹ پروفیسر قرۃ العین علی نے حاضرین کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر ڈاکٹر محمد طاہر، ڈاکٹر شائنہ سیف، ڈاکٹر عندلیب، ڈاکٹر محمد عذیر، ڈاکٹر سمیرا خانم اور شعبہ کے سبھی ریسرچ اسکالرس اور طلبہ طالبات موجود تھے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *