عام بجٹ جاری،10 کروڑ غریب کنبوں کیلئے نیشنل ہیلتھ پروٹیکشن اسکیم

arun-jetly
وزیر خزانہ ارون جیٹلی آج پارلیمنٹ میں 2018۔19کیلئے عام بجٹ پیش کررہے ہیں۔ انہوں نے اپنی بجٹ تقریر میں کہا کہ ہندوستان کی معیشت تیزی سے بہتر ہورہی ہے۔ یہ دنیا میں پانچویں سب سے بڑی معیشت بن گئی ہے۔ ساتھ ہی ساتھ انہوں نے کسانوں کی انکم میں اضافہ کیلئے بھی نئے اعلانات کئے۔وزیر خزانہ نے بجٹ تقریر میں کہا کہ ہم ریاستوں کے ساتھ مل کر تعلیم کے معیار کو بہتربنانے کیلئے کام کریں گے۔ 2022 تک ہر شہری کو اپنا گھر مہیا کرانے کا حکومت کا ہدف ہے۔
انہو ں نے کہاکہ جی ایس ٹی کی وجہ سے ٹیکس ادائیگی کرنے والوں کی تعدادمیں اضافہ ہواہے۔کیش کاچلن کم ہواہے۔انہوں نے ملک کوبھروسہ دلایاکہ کھیتی کی پالیسی کے تحت سال 2022تک کسانوں کی آمدنی دوگنی کرنی ہے۔
تجارت شروع کرنے کیلئے ’مودرا یوجنا‘کے تحت تین لاکھ کروڑروپے کا فنڈ دیاجائے گا۔ چارکروڑغریب گھروں میں بجلی کنکشن دےئے جائیں گے۔نیشنل ہیلتھ پروٹیکشن اسکیم کے تحت ایک خاندان کوسالانہ 5لاکھ روپے دےئے جائیں گے۔10کروڑغریب خاندانوں کواس کافائدہ ہوگا اورمیڈیکل خرچ ملے گا۔ ہیلتھ ویلنیس کیندربنانے کیلئے 1200کروڑروپے کا فنڈ دیاجائے گا۔50کروڑلوگوں کوہیلتھ بیمہ ملے گا۔ ملک کی 40فیصدی آبادی کوہیلتھ بیمہ ملے گا۔24نئے میڈیکل کالج کھولے جائیں گے۔پانچ لاکھ ہیلتھ سینٹرکھولے جائیں گے۔ٹی بی مریض کوہرمہینے 500روپے کی مدددی جائے گی۔
8کروڑغریب خواتین کو’اجّول یوجنا‘کے تحت مفت گیس کنکشن دےئے جائیں گے۔تعلیم کولیکر سرکاربڑاکام کرے گی۔بچوں کواسکول تک پہنچانابڑاہدف ہوگا۔ پری نرسری سے 12ویں تک پڑھائی کیلئے ایک پالیسی ہوگی۔اب تک پرائمری ، مڈل اوراعلیٰ کے لئے الگ الگ پالیسی ہوتی ہے۔آدیواسیوں کیلئے بڑااعلان کیاگیاہے اوران کے لئے اکلیہ اسکول بنائے جائیں گے۔
دہلی این سی آرمیں آلودگی روکنے کیلئے اسکیم، پرالی کے دھوئیں سے ہونے والی آلودگیوں کوروکنے کیلئے اسکیم لائی جائے گی۔اب تک 6کروڑٹوائلٹ بنائے جاچکے ہیں اور2کروڑٹوائلٹ بنائے جائیں گے۔2022تک ہرغریب کوگھردےئے جائیں گے۔’پی ایم آواس‘یوجناکے تحت غریبوں کوگھردےئے جائیں گے۔کھیتی کے قرض کیلئے 11لاکھ کروڑروپے دےئے جائیں گے۔کسان کا قرض لیناآسان ہواہے۔42میگافوڈ پارک بنائے جائیں گے۔ کسان پشوپالک کارڈ کسانوں کوبھی ملے گا۔1290کروڑروپے کی مددسے بانس مشن چلایاجائے گا۔آلو،ٹماٹر ،پیازکیلئے 500کروڑروپے دےئے جائیں گے۔بانس کوجنگل علاقے سے الگ کیاجائے گا۔2نئے فنڈ پر10ہزارکروڑروپے خرچ ہوں گے۔سرکارنے پاسپورٹ ضابطہ آسان کئے ہیں اوراب دوسے تین میں پاسپورٹ مل رہاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *