یوپی میں 100نمبرڈائل پرتعینات پولس اہلکاروں کاغیرانسانی چہرہ عیاں

100-dial-up
بھلے ہی اترپردیش کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ پولس کے حساس اورانسانیت نوازی کی بات کرتے ہیں لیکن یوپی میں یوگی پولس اہلکاروں کا غیرانسانی چہرہ سامنے آیاہے۔یایوں کہہ سکتے ہی کہ انسانیت شرمسارہوگئی۔یوپی میں 100نمبرڈائل پرتعینات پولس اہلکاروں کے غیرانسانیت رویے کی وجہ سے سہارنپورمیں دوزخمی لڑکوں کی موت ہوگئی ہے۔اترپردیش کے سہارنپورضلع میں سنگین طورپرزخمی دونوجوانوں کواسپتال لے جانے سے مبینہ طورپرمنع کرنے پرڈائل 100پرتعینات تین پولس اہلکاروں کومعطل کردیاگیاہے۔ان پولس اہلکاروں کا کہناتھاکہ خون سے گاڑی گندی ہوجائے گی۔سہارنپورکے ایس پی سٹی پربل پرتاپ سنگھ نے بتایاکہ جمعہ کودیرشب ارپت کھرانا(17) اوراس کا دوست سنی(17) بائک سے اپنے گھرلوٹ رہے تھے تبھی بیری باغ علاقے میں منگل نگرچوک پران کی بائک بے قابوہوکرایک کھمبے سے ٹکراگئی اورپاس واقع ایک نالے میں گرگئے۔
آس پاس کے لوگوں نے فوری طورپران دونوں لڑکوں کونالے سے باہرنکالاتو وہ خون سے لہولہان تھا۔ لوگوں نے ڈائل 100کواس کی جانکاری دی ۔لوگوں نے بتایاکہ ڈائل 100پرتعینات پولس اہلکاروں نے زخمی لڑکوں کواپنی گاڑی میں بیٹھاکراسپتال لے جانے سے منع کردیا اورکہاکہ گاڑی خون سے گندی ہوجائے گی۔آناً فاناً بعدمیں دونوں زخمیوں کوآٹورکشہ کے ذریعہ اسپتال لے جایاگیا جہاں ڈاکٹروں نے دونوں کومردہ قراردے دیا۔
ایس پی نے ان کے خلاف سخت کارروائی کرتے ہوئے ڈائل 100پرتعینات تینوں پولس اہلکاروں ہیڈ کانسٹیبل اندرپال سنگھ، کانسٹیبل پنکج کمار اورڈرائیورمنوج کمارکومعطل کردیاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *