آخرحج سبسڈی ختم کرہی دی گئی

hajj
مرکزکی مودی سرکارنے سفرحج پرجانے والے کوجھٹکادیاہے۔مرکزی سرکارنے عازمین حج کوملنے والی سبسڈی ختم کردی ہے۔ہرسال ایک لاکھ 75ہزارعازمین حج کوسبسڈی دی جاتی تھی۔اس پرسرکارکوسالانہ 700کروڑروپے خرچ کرنے پڑتے تھے۔مرکزی سرکارنے نئی حج پالیسی کے تحت یہ فیصلہ لیاہے۔
واضح رہے کہ اس سے پہلے مودی سرکارنے مسلم خواتین کوبغیرمحرم کے حج پرجانے کی اجازت دی تھی۔ مرکزی وزیرمختارعباس نقوی نے اس کی جانکاری دی۔انہو ں نے کہاکہ اب مرکزی سرکار عازمین حج کوسبسڈی نہیں دے گی۔اس سال ایک لاکھ 75ہزارمسلمان سفرحج پرجانے والے ہیں۔نقوی نے کہاکہ سفرحج کیلئے ملنے والی سبسڈی کافائدہ غریب اورضرورتمند مسلمانوں کونہیں ملتاتھا۔ایک سوال کے جواب میں انہو ں نے کہاکہ سفرحج پرجانے والے غریب مسلمانوں کیلئے مودی سرکارنے بندوبست کیاہے۔آزادی کے بعدیہ پہلی بارہے، جب ہندوستانی مسلمان بناسبسڈی کے سفرحج پرجائیں گے۔مرکزی اقلیتی وزیرنقوی نے کہاکہ انہو ں نے کہاکہ آنے والے دنوں میں سمندری راستے سے بھی سفرحج شروع کیاجائے گا۔انہوں نے کہاکہ اب حج سبسڈی فنڈ کا استعمال اقلیتی کمیونٹی کی لڑکیوں اورخواتین کوتعلیم دینے کیلئے کیاجائے گا۔
وہیں پرکانگریس ترجمان م ۔افضل نے کہاکہ یہ کہناپوری طرح سے غلط ہے کہ حج سبسڈی فنڈ سے ایجنٹوں اورکچھ کمپنیوں کوفائدہ ہوتاتھا۔ انہو ں نے کہاکہ سپریم کورٹ نے بھی 10سال کے اندرسبسڈی کوآہستہ آہستہ ختم کرنے کی بات کہی تھی۔ یوپی اے سرکارکے وقت سے ہی حج سبسڈی ختم کرنے کی جانب کام کیاجارہاہے، لیکن مودی سرکارنے اس کواچانک اوربیحدجلدی ختم کردیا۔مودی سرکاریہ فیصلہ اتناجلدی لیکرمسلمانوں کوسخت پیغام دیناچاہتی ہے۔ دوسری جانب بی جے پی ترجمان سیدشاہنوازحسین نے کہاکہ سال 2012سے ہی حج سبسڈی ختم کرنے کی شروعات ہوئی تھی، اس کومودی سرکارنے آگے بڑھایاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *