مظفرنگرفساد:دونوں فرقے کے لوگوں نے شروع کی امن و شانتی کی پہل

muzaffarnagar-riots
ساڑھے چال سال قبل پوری دنیا میں بحث کا موضوع بنا مظفرنگر کے فرقہ وارانہ فساد کی یادوں کو اب لوگ بھولنا چاہتے ہیں اور دونوں طبقات کے لوگوں (مسلمان اور جاٹ) نے پچھلی تمام غلطیوں اور غلط فہموں کو دور کرکے امن و شانتی کی پہل شروع کردی ہے۔ ستمبر 2013؍ ء کے اس فساد میں جہاں تقریباً 67؍ لوگوں کی موت ہوگئی تھی ،جن میں اکثریت اقلیتی فرقہ کی تھی وہیں لاکھوں لوگ اپنے آبائی مواضعات کو چھوڑ کر آج بھی عارضی کالونیوں میں بسے ہوئے ہیں۔ اتنا ہی نہیں دونوں فرقہ کے لوگ آج بھی متعدد مقدمات کے جال میں پھنسے ہوئے ہیں ۔ مظفرنگر فساد کے حوالہ سے ایک اچھی خبر آئی کہ دونوں طبقات کے لوگ گلے شکوے بھول کر امن شانتی کی پہل کررہے ہیں اور ا س سلسلہ میں گزشتہ ماہ دونوں طبقات کے ذمہ داران کی سابق وزیر اعلیٰ ملائم سنگھ یادو سے ملاقات بھی ہوچکی اور اب چودھری اجیت سنگھ کے بیٹے سابق رکن پارلیمنٹ جینت چودھری بھی دونوں فریق میں مفاہمت کراکے ایک دوسرے سے گلے شکوے دور کرانا چاہتے ہیں۔
اس سلسلہ میں مظفرنگر کے دیہی مواضعات میں متعددمیٹنگیں ہوچکی اور دونوں فریق کے لوگ ایک دوسرے کے مقدمات کو واپس لینے کے رضا مند ہوگئے۔ اس سلسلہ میں 14؍ جنوری سے باضابطہ طورپر عملی کارروائی شروع ہوجائے گی۔پنچایتی سلسلہ میں اہم کردار ادا کررہے ہیں انبر خان اورجاٹ سنگھرشن سمیتی کے صدر وپن بالیان کے مطابق لوئی،پھگانہ،پوربالیان،کٹبہ اور پلڑا گاؤں میں ابھی تک پنچایتیں ہوچکی ہیں اور تمام لوگ امن وشانتی چاہتے ہیں،پنچایتوں میں شامل دونوں فرقہ کے لوگوں نے فیصلے اور مفاہمت کو ضروری بتاتے ہوئے اس سلسلہ میں عملی کارروائی پر زور دیا ،جس کے بعد آئندہ 14؍ جنوری سے مظفرنگر عدالت میں دونوں فرقہ کے لوگوں اپنے اپنے حلف نامے داخل کرنا شروع کردینگے۔واضح رہے کہ اس سلسلہ سابق سماجوادی حکومت اور دیگر سماجی تنظیموں نے دونوں فرقوں میں آپسی صلح سمجھوتے کرانے کی کافی کوششیں کی تھی مگر اس وقت کسی کو بھی کامیابی نہیں مل سکی تھی مگر اب لوگ اس پورے فساد اور اس کے بعد کے نتائج سے پوری تھک چکے ہیں ،جس کے بعد انہوں نے اچھے اقدامات کی شروعات کی ہے ،یقینی طورپر یہ قدم آپسی کھٹاس کو دور کرنے میں نہایت اہم ثابت ہوگااور امید کی جانے چاہئے اس کے بعد محبت نگر کے نام سے مشہور مظفرنگر اپنی پرانی تاریخ دوہرائے گا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *