ماں بننے والی ہوں،نیوزی لینڈ کی پی ایم کااعلان

jacinda-ardern
نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈاآرڈرن نے اعلان کیاہے کہ وہ ماں بننے والی ہیں۔یہ ان کاپہلا بچہ ہوگا۔اس کے ساتھ ہی و زیراعظم کے عہدہ رہتے ہوئے بچے کوجنم دینے والی اپنے ملک کی پہلی خاتون بن جائیں گی۔
37سال کی جیسنڈا نے پچھلے سال اکتوبرمیں حلف لیاتھا۔ انتخابات سے پہلے ایک انٹرویومیں جب ان سے پوچھاگیاتھاکہ وہ اپناخاندان بڑھاناچاہتی ہیں،توان کاجواب تھاکہ حاملہ ہونے سے خواتین کے کریئرپرکوئی اثرنہیں پڑتاہے۔ جیسنڈانے خوداپنے شوہرکلارک گیفورڈکے ساتھ جمعرات کوماں بننے کی خبردی۔ انہوں نے کہاکہ میں اورکلارک پرجوش ہیں۔جون میں اپنے پہلے بچے کااستقبال کرنے کیلئے ہم تیارہیں۔جیسنڈانے کہاکہ بچے کوجنم دینے کے بعدوہ 6ہفتے کی چھٹی لیں گی۔نائب وزیراعظم وسٹن پٹرس ان کی جگہ کاموں کوسنبھالیں گے۔
برطانیہ کے ٹونی بلیئرسمیت کئی ملکوں کے وزراء اعظم اپنے مدت کارکے دوران ماں باپ بن چکے ہیں۔سابق پاکستانی کی آنجہانی وزیراعظم بے نظیربھٹودنیاکی پہلی ایسی صدرتھیں، جنہوں نے مدت کارکے دوران بچے کوجنم دیاتھا۔وہ 1990میں وزیراعظم رہتے ہوئے ماں بنی تھیں۔سب سے خاص بات یہ ہے کہ پی ایم مدت کارکے دوران جیسنڈاماں بننے والی اپنے ملک کی پہلی خاتون اوردنیاکی دوسری خاتون وزیراعظم ہوں گی۔اس سے پہلے پاکستان کے سابق آنجہانی وزیراعظم بے نظیربھٹوپی ایم عہدہ پررہتے ہوئے بچے کوجنم دیاتھا۔
بہرحال ماں بننے کی خبرکے اعلان کے بعدنیوزی لینڈکی پی ایم کوسوشل میڈیا پرچاروں طرف سے مبارکباد مل رہی ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *