زینب سانحہ: ’میں ایک ماں ہوں،اسلئے اپنی بچی کے ساتھ بیٹھی ہوں‘

pakistan-news-anchor

پاکستان میں ایک سات سال کی معصوم بچی زینب انصاری کی آبروریزی کے بعداس کا قتل کردیاگیا۔جس کے بعدپورے پاکستان میں عصمت دری اورقتل کے خلاف مظاہرہ ہورہاہے۔وہاں کی کئی بڑی ہستیوں نے اس کی سخت مذمت کی ہے۔اس دوران پاکستان کے ایک نیوزچینل سماء کی اینکرکرن نازنے انسانیت کوشرمسارکرنے والے واقعہ کانایاب طریقے سے مذمت و مخالفت کی۔کرن نازنے نیوزاسٹوڈیومیں خبرپڑھنے کے دوران گودمیں اپنی بیٹی کوبٹھایاہواتھا۔نیوزاینکرکرن ناز نے اسٹوڈیومیں بلیٹن کی شروعات کرتے ہوئے کہاکہ

 

 

 

 

’’السلام علیکم ….میں آپ کی میزبان کرن ناز لیکن آج میں کرن نازنہیں ہوں،بلکہ ایک ماں ہوں،اسلئے اپنی بچی کے ساتھ بیٹھی ہوں‘‘۔کرن نے کہاکہ ’’اس ملک میں بڑے بڑے سانحے ہوتے ہیں ، ایک ہی جھٹکے میں کئی درجن لوگوں کاشہیدہوجاناغیرمعمولی بات نہیں ہے۔کون مارتاہے، کیوں مارتاہے اس سوال کاجواب بھی کئی بار نہیں ملتا‘‘۔ ’’کسی نے ٹھیک ہی کہا…جنازہ جتناچھوٹاہوتاہے،اتناہی بھاری ہوتاہے،ایساہی ننھاجنازہ آج قصورکی سڑکوں پررکھاہواہے اورپوراپاکستان اس کی بوجھ تلے دباہواہے۔‘‘ ’’عجیب کہانی ہے اس مظلوم اورلاچاربچی کی…ادھرماں باپ حرم میں بیٹھے زندگی کی دعاکررہے تھے،ادھر قصورمیں کوئی درندہ اسی زینب کی زندگی کی ڈورکاٹ رہاتھا..ادھرماں باپ اپنی لاڈلی زینب کیلئے کھلونے خریدرہے تھے ..ادھرکوئی وحشی عین اسی وقت اس کی لاش کوکچڑے میں پھینک رہاتھا۔ ادھروہ ایک ایک لمحہ یہ سوچ کرگزاررہے تھے کہ کب اپنی معصوم کوپھرسے سینے سے لگائیں گے اوراس کے گالوں میں چومیں گے …ادھرکوئی خبیث ہمیشہ کیلئے ان کوان سے دورکررہاتھا‘‘انہوں نے آگے کہاکہ یہ صرف ایک معصوم بچی کے ساتھ زیادتی اور قتل نہیں ہے بلکہ پورے معاشرے کا قتل ہے…معصوم زینب کا نہیں آج انسانیت کا جنازہ اٹھاہے آج۔(اینکرکی باتوں سے معلوم ہوتاہے اس سانحہ کے وقت بچی کی والدین سعودی عرب میں قیام پذیرہیں شایدعمرہ کیلئے گئے ہوئے ہیں)

 

 

 

 

 

وائرل ہورہے ویڈیومیں نیوزاینکرنے پاکستان کی سرکارکوکھری کھوٹی سنائی۔انہوں نے کہاکہ افسوس ،مذمت ،تحقیقات ،کمیٹی ،کمیشن اورپھرانکوائری جیسی باتیں پھرہوں گی ،مگرسچ تویہ ہے کہ زینب کوآپ کی انصاف کی ضرورت نہیں ہے سر۔زینب کے ساتھ جوہواہے اس کا انصاف قیامت کے دن اس کارب کرے گا ،اس کا اللہ کرے گا..جب وہ اپنی چھوٹی سی قبرسے اٹھ کرپوچھے گی کہ مجھے کس جرم میں ماراہے؟‘‘۔اس دن اس کا انصاف ہوگا۔اس دن کا اس کا حساب ہوگا،بلکہ اس دن پوراکاپوراحساب ہوگا۔اس دن زینب کا ہاتھ اورظالموں کا گریبان ہوگا۔حکمران بس اتناسوچ لیں کہ اس دن وہ بے بس ہوں گے اورسات سالہ زینب بہت طاقتورہوگی۔‘‘سماء نیوزچینل کے اینکرکرن نازکایہ ویڈیوسوشل میڈیاپرتیزی سے شیئرہوااوران کی خوب تعریف ہورہی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *