بہارکے اقلیتی کمیشن کے سابق چیئرمین پروفیسرسہیل احمدخان پیرموہانی قبرستان میں سپردخاک

suhail-ahmad-khan
بہارکے اقلیتی کمیشن کے سابق چیئرمین پروفیسرسہیل احمدخان کاطویل علالت کے بعدپٹنہ میں واقع پارس ایچ ایم آرآئی اسپتال میں 28جنوری کوانتقال ہوگیا۔ان کی عمرتقریباً 75سال تھی۔پروفیسرسہیل احمدخان گذشتہ چارروزسے پارس اسپتال میں داخل تھے۔ان کے پسماندگان میں دوبیٹے اورایک بیٹی کے علاوہ ان کی اہلیہ ہیں۔ان کی نمازجنازہ آج 29جنوری کومقامی انجمن اسلامیہ ہال میں اداکی گئی اورپیرموہانی ،نزدکدم کنواں میں سپردخاک کیاگیا۔ان کی نمازجنازہ وتدفین میں ملی،سماجی ،سرکاری ونیم سرکاری ،دانشوران کے علاوہ کثیرتعدادمیں لوگوں نے شرکت کی۔
عیاں رہے کہ وہ کالج آف کامرس میں اردوکے پروفیسرتھے اوروہیں سے سبکدوش ہوئے تھے۔وہ مختلف دینی وملی تنظیموں سے بھی وابستہ رہے۔اجمیردرگارہ کمیٹی کے وہ چےئرمین بھی رہے تھے۔اس کے علاوہ جماعت اسلامی سے بھی ان کی گہری وابستگی رہی۔اقلیتی کمیشن کے چےئرمین کا عہدہ سنبھالنے کے بعد انہو ں نے عوام سے مضبوط رشتہ قائم کیا اورآدری کے ساتھ مل کربہارمیں مسلمانوں کی تعلیمی، اقتصادی، سماجی حالت جاننے کیلئے ایک سروے بھی کرایاتھا۔اگرچہ وہ رپورٹ سردخانہ کی نذرہوگئی تاہم اسی کوبنیادبناکرمرکزکی یوپی اے حکومت نے اسی طرزپرسچرکمیٹی کی تشکیل کی۔بھاگلپورفسادکے دوران ملت کی دادرسی میں ان کا اہم کرداررہا۔اس کے علاوہ مدارس کے بچوں کولال کارڈ بھی مہیاکرایا۔ریاست کے کی قبرستانوں کوشرپسندوں سے آزادکرانے میں بھی اہم رول اداکیاتھا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *