بہار کے سابق وزیر شاہد علی خان کا انتقال

shahid-ali-khan
بہار حکومت کے سابق وزیر اور’ ہم‘ پارٹی کے اہم لیڈر شاہد علی خان کا 4جنوری کو دل کا دورہ پڑنے کی وجہ سے جے پور میں انتقال ہوگیا۔ شاہد علی خان جے پور کسی کام سے آئے ہوئے تھا جہاں اچانک انہیں دل کادورہ پڑا،جس کے ان کی موت ہوگئی۔شاہد علی خان بہار کے اہم سیاسی رہنما مانے جاتے ہیں ،تین مرتبہ ایم ایل اے رہ چکے ہیں،بہار کی این ڈی اے سرکار میں کابینہ وزیر بھی رہ چکے ہیں ،ان کی موت سے بہار کی سیاست میں ایک عظیم خلا پید اہوگیاہے۔
ان کی عمر57سال تھی۔ پسماندگان میں بیوہ کے علاوہ تین بیٹیاں اوروالدہ ہیں۔خاندان کے قریبی ذرائع کے مطابق، ان کوتجہیزوتدفین کیلئے جے پورسے سیتامڑھی لایاجارہاہے۔مرحوم کے آخری دیدارکیلئے لاش کوپٹنہ میں بھی ان کی رہائش گاہ پرکچھ دیرکیلئے رکھاجائے گا۔عیاں رہے کہ شاہدعلی خان سیتامڑھی کے آختہ گاؤں میں بدیع الزماں خان عرف بچہ بابوکے گھر1960میں پیداہوئے۔ان کے والدبھی ریاست کے سرکردہ سیاسی رہنمااوررکن اسمبلی رہ چکے تھے۔

شاہد علی خان کے انتقال پر بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار ، سابق وزیر اعلی جتن رام مانجھی سمیت سبھی سیاسی شخصیات نے تعزیت کا اظہار کیا ہے۔وزیر اعلی نتیش کمار نے گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کی موت سیاست کیلئے ایک بڑا خسارہ ہے ، وہ ایک اچھے سیاستداں تھے اور سماجی کام کاج میں کافی دلچسپی رکھتے تھے۔ سرکاری اعزاز کے ساتھ ان کی آخری رسوم ادا کی جائیں گی۔
عیاں رہے کہ شاہد علی خان 1990 سے لے کر اب تک سیتامڑھی ، پپری اور سرسنڈ اسمبلیوں حلقوں سے ممبر اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔سابق وزیر اعلی جتیندر رام مانجھی اور نتیش کمار کے درمیان اختلاف کے بعد مانجھی کے ساتھ ہوگئے تھے او رتاحیات انہیں کی پارٹی میں سینئر لیڈر کی حیثیت سے موجودرہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *