ماہرادب ڈاکٹر احمد علی برقی اعظمی سے ڈی یواورجامعہ کے وفدنے ملاقات کی

ahmad-ali-barqi-azmi
معرف فارسی دانشور اور شاعر ڈاکٹر احمد علی برقی اعظمی سے ان کی رہائش گاہ(واقع جوہری فارم ۔جامعہ نگر) پر ان کی مزاج پرسی کے لیے دہلی یونیورسٹی،جے این یو اور جامعہ ملیہ اسلامیہ کے اساتذہ و طلبا کے ایک وفد نے ملاقات کی۔اس دوران متعددعلمی ادبی موضوعات اوراردو دنیا کے تعلق سے متعدد خیالات کاتبادلہ بھی ہوا جس سے وہا ں موجود ارکان وفدمستفیض ہوئے ۔
واضح رہے کہ ڈاکٹر احمد علی برقی اعظمی اعظم گڑھ کے نامور شاعر رحمت الٰہی برق کے صاحبزادے اور ان کی شاعری کاینات و جہات کے امین ہیں ۔چنانچہ وہ ایک طویل عرصے سے اخبارات و رسائل میں چھپنے کے ساتھ ساتھ سوشل میڈیا پر چھپنے والی معروف ترین شخصیات میں شمار ہوتے ہیں ۔چنانچہ آئے دن کی منظوم کاوشیں ،غزلیں، ترانے، نظمیں، سپاس نامے وغیرہ فیس اور دیگر سوشل سائٹس پر نظر آتے ہیں ۔آپ کی کاوشوں سے ہندوستان و پاکستان سمیت پوری دنیا مستفیض ہوتی ہے۔اس بسیار گوئی کے باوجود لطف کی بات یہ ہے کہ ان میں شعریت اور فکر اپنی تمام تر حسیات وآہنگ کے ساتھ موجود ہوتی ہے۔ ردیف وقوافی و وزن نہایت اچھوتا اور اسلوب اعلا فکر وں کا غماز ہوتا ہے۔ان کی موجود جدہ وجہد اور کاشو ں نے انھیں علم و ادب کی دنیا میں ایک اعتبار بخشا ہے جس کے وہ بجاطور پر مستحق بھی ہیں اور ان کی محنتیں اس لائق بھی ہیں۔
اس وفد کی قیادت شعبہ اردو کروڑی مل کالج کے استاذ ڈاکٹر محمد یحییٰ صبا نے کی۔وفد کے ارکان میں جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے ریسرچ اسکالر عمران عاکف خان، جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طالب علم راشد الاسلام وغیرہ کے نام نمایاں ہیں ۔

 

یہ بھی پڑھیں   جاویداخترکی کہانی فلمی اسٹوری سے کم نہیں
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *