چین طاقتورملک ضرورہے لیکن ہندوستان بھی کمزورنہیں:بپن راوت

bipin-rawat
ہندوستانی فوج سربراہ جنرل بپن راوت نے دہلی میں پریس کانفرنس میں چین پربات کرتے ہوئے سیناسربراہ بپن راوت نے کہاکہ چین طاقتورملک ضرورہے، لیکن ہندوستان بھی کمزورملک نہیں ہے۔انہو ں نے کہاکہ ہندوستان کسی کوبھی اپنے علاقے میں دراندازی کی اجازت نہیں دے گا۔
جب ان سے پوچھاگیاکہ کیاڈوکلام میں لڑائی بھی ہوسکتی تھی؟ توانہوں نے کہاکہ آپ اس صورتحال کیلئے ہمیشہ تیاررہتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ ہاں،ایساہوسکتاتھا۔اگریہ بڑھ جاتاتو ایساہوسکتاتھا اورہم اس کیلئے تیارتھے لیکن ہم اسے اسی علاقے میں محدودرکھناچاہتے تھے کیونکہ یہاں کے علاقے کی جغرافیہ ہمارے حق میں تھا۔ہم زیادہ فکرمندہیں سائبر اورانفارمیشن وارفےئرکے تئیں۔کہیں ایسانہ ہوکہ آپ کے بینک اکاؤنٹ سے پیسے ہی اڑجائیں۔
انہوں نے پریس کانفرنس میں کہاکہ تمام کوششوں کے باوجودجموں وکشمیرمیں دہشت گردوں کی تعداداوردہشت گردانہ واقعات میں کمی نہیں آئی ہے۔انہوں نے کہاکہ برہان وانی کے جوحالات بگڑے تھے وہ شمالی کشمیرمیں بگڑے تھے۔انسرجنسی جب بلٹ اپ ایریامیں ہوتی ہے تب توبہت مشکل ہوتی ہے۔ ہمارا ہیومن رائٹ ریکارڈ بہت اچھاہے۔اگردہشت گردکسی گھرمیں چھپاہوتاہے تووہ گھبرایاہوا ہوتاہے جس کے چلتے وہ فائرکرتاہے اورہماری کیسوالٹیس ہوجاتی ہے۔
انہو ں نے کہاکہ ہم نے 39دہشت گردوں کوزندہ بھی پکڑے ہیں۔ہم ان کوپوراموقع دیتے ہیں، رابطہ کرتے ہیں لیکن میں یہ کہہ سکتاہوں کہ کشمیرمیں دہشت گردختم نہیں ہواہے۔اس بارہمارازیادہ فوکس شمالی کشمیرپرہوگا۔ہم گہن آپریشن بارمولہ، ہندواڑا، باندی پور ،پٹن وغیرہ شمالی کشمیرپرفوکس کریں گے۔
انہوں نے کہاکہ پاکستان دہشت گردلگاتاربھیجتاہی رہے گا،آپ جتنے ماروگے وہ پھربھیج دے گا،اس لئے ہم نے فیصلہ کیاہے کہ پاکستان سیناکی جن پوسٹس کونشانہ بنایاجائے جہاں سے دہشت گردوں کومددمل رہی ہے۔ہمارامقصد پاکستانی پوسٹس کوبربادکرنارہاہے تاکہ وہ درد ان کومحسوس ہو۔اسلئے ،جوکیسوالٹیس پاکستان نے جھیلی ہے وہ ہم سے تین چارگنازیادہ ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *