راشٹریہ سہارا نمائندہ انوارالحق کے خسر کا انتقال

روز نامہ راشٹریہ سہارا دہلی کے نمائندہ انوارالحق کے خسر محفوظ الرحمن کا دل کا دورہ پڑنے سے اچانک15جنوری کو انتقال ہوگیا ۔ ان کی عمر تقریباً 65سال تھی ۔ اطلاع کے مطابق جوکی ہاٹ حلقہ کے آبائی گاؤں تارن میں وہ عشاء کی نماز سے فارغ ہو کر جیسے ہی گھر پہنچے ،سینے میں تکلیف کا احساس ہوا ، علاج کے لئے ارریا لے جایا گیا۔حالت انتہائی نازک ھو نے کی وجہ سے ڈاکٹروں نے پورنیہ لے جانے کی صلاح دی۔گھروالے پورنیہ لے کر گئے جہاں ہوپ اسپتال میں داخل کرایا ۔ڈاکٹروں نے وینٹی لیٹر پر رکھا اور علاج شروع کی لیکن کچھ تدبیر کام نہ آئی اور وہ دیر رات مالک حقیقی سے جاملے۔اناللہ وانا الیہ راجعون ۔ نماز جنازہ بعد نماز مغرب چھوٹے داماد قاری انوارالحق نے پڑھائی اور گاؤں کے قبرستان ہزاروں سوگواروں نے نم آنکھوں سے سپرد خاک کیا۔ پسماندگان میں اہلیہ کے علاوہ 6 لڑکے اور 2 لڑکیاں ہیں۔ مرحوم سماجی کاموں میں بھی سرگرم رہتے تھے اور صو م وصلوۃ کے پابند تھے ۔ ان کی رحلت پر متعدد سیاسی وسماجی رہنماؤں نے اظہار غم کیا ہے اور پسماندگان سے صبر کی تلقین کی ہے۔اظہار تعزیت کرنے والوں میں خاص طور پر سابق وزیر سرفراز عالم ، ضلع پارشدگلشن آرا،مکھیا ناظم ، سابق حج کمیٹی ممبرمفتی عبد الوہاب قاسمی ،سابق مکھیا محمد اسرائیل ،سابق مکھیا معراج عالم ، سوشل ڈیمو کریٹک پارٹی کے قومی رکن محترمہ شاہین کوثر دہلی،سینئر صحافی عبد القادر شمس، تسلیم رحمانی مسلم پولیٹکل کونسل کے قومی صدر ،نعمان قیصر ڈی ڈی نیوز ، عابد انور یو این آئی ،راشد الاسلام چوتھی دنیا، نوشاد عالم انقلاب ،واثق الخیر ہمارا سماج ،صحافی منظر امام وغیرہ کے نام قابل ذکر ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *