انجوقتل معاملے میں صہیب الیاسی کوعمرقیدکی سزا

suhaibilyasi-anju
ٹی وی شو’انڈیازموسٹ وانٹیڈ‘کے ہوسٹ صہیب الیاسی کوبیوی کے قتل کے17سال پرانے معاملے میں دہلی کی ایک عدالت نے عمرقیدکی سزاسنائی ہے۔عدالت نے اس معاملے میں صہیب الیاسی کو17دسمبرکوقصورارقراردیاتھا۔
عیاں رہے کہ 11جنوری،2000کوانجوالیاسی کا مبینہ طورپرقتل کردیاگیاتھا۔ان کے جسم پرچاقوسے حملہ کئے گئے زخم کے نشان تھے۔شروعات میں انجوکی موت کوخودکشی سمجھاگیا۔لیکن کچھ مہینے کے بعدانجوکی ماں اوربہن نے ایس ڈی ایم کے سامنے بیان دیاکہ صہیب نے انجوکوخودکشی کے لئے مجبورکیا۔الیاسی شروع میں اپنی بیوی کوجہیزکیلئے ہراساں (جواس کی موت کی وجہ بنی)کے الزام میں گرفتارکیاگیا۔حالانکہ صہیب الیاسی نے اس کا پرزورطریقے سے انکارکیاتھا۔
پوسٹ مارٹم رپورٹ میں طے نہیں ہوپایاکہ انجونے خودکشی کی تھی یاان کاقتل کیاگیاتھا۔اس معاملے میں اس وقت نیاموڑآگیاجب انجوکی ماں نے مانگ کی کہ صہیب پرقتل کامعاملہ چلایاجائے۔حالانکہ ٹرائل کورٹ نے ان کی اس مانگ کوخارج کردی ،لیکن دہلی ہائی کورٹ نے 2014میں حکم دیاکہ صہیب پرقتل کا کیس چلایاجائے۔سال 2000میں’ انڈیاز موسٹ وانٹیڈ‘کولیکرالیاسی کاکرےئرشباب پرتھا۔یہ ٹی وی شوبھگوڑے مجرموں پرمنحصرتھااوریہ ملک کااس طرح کاپہلاٹی وی شوتھا۔
لہٰذا اس سلسلے میں یہ بھی کہاجاتاہے کہ صہیب الیاسی کے کریئرکوختم کرنے کیلئے کسی نہ کسی طرح کی سازش کی گئی ہے۔بہرحال توقع ہے کہ نچلی عدالت کے فیصلے کے بعدصہیب الیاسی ہائی کورٹ کی جانب رخ کریں گے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *